سندھ کے رجسٹرڈ یتیم خانوں کے میٹرک و انٹر طلباء کی فیسیں ختم، نوٹیفکیشن جاری

فیصلے کااطلاق سندھ کے نجی اسکولوں اورکالجوں میں زیرتعلیم ایسے طلباء پربھی ہوگا جورجسٹرڈیتیم خانوں میں رہائش پذیرہیں

ہفتہ مئی 12:04

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) حکومت سندھ نے صوبے کے رجسٹرڈیتیم خانوں میں رہائش پذیر طلباء وطالبات کی میٹرک اورانٹر کی فیسیں ختم کردی ہیں، رجسٹریشن،انرولمنٹ اورسالانہ امتحانی فیسوں کی مد میں آنے والے اخراجات حکومت سندھ برداشت کرے گی۔حکومت سندھ نے سرکاری تعلیمی اداروں کے طلباء کے بعد اب صوبے کے رجسٹرڈیتیم خانوں میں رہائش پذیر طلباء وطالبات کی میٹرک اورانٹرکی رجسٹریشن ،انرولمنٹ اورامتحانی فیسیں ختم کردی ہیں اوراس مد میں آنے والے اخراجات از خود برداشت کرنے کافیصلہ کیاہے ۔

وزیراعلی سندھ کی منظوری سے حکومت سندھ کے محکمہ یونیورسٹیزاینڈبورڈزکی جانب سے اس سلسلے میں باقاعدہ نوٹی فکیشن بھی جاری کردیاگیاہے جس کے مطابق یہ فیصلہ فوری طورپرنافذالعمل ہوگا۔

(جاری ہے)

ایڈیشنل چیف سیکرٹری یونیورسٹیزاینڈبورڈزمحمد حسین سیدکے دستخط سے جاری کیے گئے نوٹی فکیشن کے مطابق سندھ میں رجسٹرڈیتیم خانوں میں مقیم نویں ،دسویں ،گیارہویں اوربارہویں جماعتوں کے طلباء وطالبات کی رجسٹریشن،انرولمنٹ اورسالانہ امتحانی فیسوں کی مد میں آنے والے اخراجات حکومت سندھ برداشت کرے گی۔

اس فیصلے سے سندھ کے تمام تعلیمی بورڈز کو بھی آگاہ کردیاگیاہے جبکہ صوبائی محکمہ سماجی بہبودکوایک خط لکھاجارہاہے جس میں محکمے سے سندھ میں رجسٹرڈیتیم خانوں اوراس میں مقیم میٹرک اورانٹرکی سطح کے طلبہ کی درست تعدادمانگی جارہی ہے۔واضح رہے کہ فیصلے کااطلاق سندھ کے نجی اسکولوں اورکالجوں میں زیرتعلیم ایسے طلباء پربھی ہوگا جورجسٹرڈیتیم خانوں میں رہائش پذیرہیں۔

دریں اثنا ذرائع نے بتایاکہ حکومت سندھ کی جانب سے رجسٹرڈیتیم خانوں میں رہائش پذیرپہلی سے بارہویں جماعت تک کے طلباء کی نجی اسکولوں کی ٹیوشن فیسیں بھی ختم کرنے پر غور کیا جارہا ہے اگریہ فیصلہ کیاگیاتوایسی صورت میں حکومت سندھ نجی اسکولوں میں زیرتعلیم ایسے طلباء کی ٹیوشن فیسیں بھی اداکرے گی جوسندھ کے رجسٹرڈیتیم خانوں میں رہائش پذیرہوں۔

متعلقہ عنوان :