ماہ صیام کے تقدس کو کس صورت پامال نہ ہونے دیا جائے گا،مرتکب افراد کو موقع پر سخت سزا دی جائے گی‘منشاء اللہ بٹ

عوام کو ہر قسم کی اشیاء خورد و نوش و ضروریہ کی فراہمی کیلئے صوبہ بھر میں بلدیاتی اداروں کے تعاون سے رمضان بازاروں کا جال بچھایا جارہا ہے معیاری اشیاء صرف کی مقررہ قیمتوں پر فراہمی کو یقینی بنایا جائیگا ،کسی بھی شکایت پر متعلقہ انتظامیہ کو جوابدہ ٹھہرایا جائیگا‘صوبائی وزیر بلدیات

جمعرات مئی 14:28

ماہ صیام کے تقدس کو کس صورت پامال نہ ہونے دیا جائے گا،مرتکب افراد کو ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مئی2018ء) صوبائی وزیر بلدیات محمد منشاء اللہ بٹ نے کہا ہے کہ ماہ صیام کے تقدس کو کس صورت پامال نہ ہونے دیا جائے گا، مرتکب افراد کو موقع پر سخت سزا دی جائے گی، بلدیاتی اداروں کے تعاون سے ماہ رمضان المبارک میں عوام کو ہر قسم کی سبزیوںپھل اور اشیاء خورد و نوش و ضروریہ کی فراہمی کے لئے صوبہ بھر رمضان بازاروں کا جال بچھایا جا رہا ہے،اس سلسلے میں تمام چئیرمین و ڈپٹی چئیر مین ودیگر بلدیاتی افسران کو اس سلسلے میں پابند کر دیا گیا ہے ، ان تمام رمضان بازاروں میںعوام کی سہولت کیلئے صفائی ستھرائی کے سلسلہ میںگزشتہ برسوں سے بڑھ کر انتظامات کیے جارہے ہیںجبکہ اشیاء صرف و خورد و نوش کی قیمتوں میں استحکام کیلئے کوئی بھی کسر اٹھا نہ رکھی جائے گی،معیاری اشیاء صرف کی مقررہ قیمتوں پر فراہمی کو یقینی بنایا جائے گا اور اگر کہیں بھی اس ضمن میں کوئی شکایت سامنے آئی تو متعلقہ انتظامیہ کو جوابدہ ٹھہرایا جائے گا، رمضان المبارک میں عوام کو ریلیف کی فراہمی کیلئے کیے گئے اقدامات کی سختی سے نگرانی کی جائے گی۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب رمضان المبارک میں عوام کو ریلیف کی فراہمی کیلئے جامع پروگرام ترتیب دے رہی ہے۔ حکومت عوام کو ماہ صیام کے دوران سستے آٹے کی فراہمی پر 11 ارب روپے کی خطیر رقم کی سبسڈی دے گی۔ رمضان بازاروں اوراوپن مارکیٹ میں 20کلوگرام آٹے کا تھیلا 500 روپے جبکہ 10 کلو گرام آٹے کا تھیلا 250 روپے میں دستیاب ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک کے دوران عوام کو ریلیف دینے کیلئے صوبہ بھر میں 300 سے زائد سستے رمضان بازار لگائے جائیں گے جبکہ 32 ماڈل بازار بھی سستے رمضان بازاروں کے طور پر کام کریں گے۔

فری سحر و افطارکیلئے صوبہ بھر میں 2 ہزار دسترخوان لگائے جائیں گے۔ عوام کو معیاری اشیاء خوردونوش کی مناسب نرخوں پر فراہمی یقینی بنانا متعلقہ اداروں کی ذمہ داری ہو گی اوراس حوالے سے کوئی کسر اٹھا نہ رکھی جائے گی۔انہوںنے کہاکہ ذخیرہ اندوزوں اور ناجائز منافع خوروں کے خلاف بلاامتیاز کارروائی ہوگی اور ذخیرہ اندوزی کی شکایات پر متعلقہ کمشنرز، آر پی اوز، ڈپٹی کمشنرز اور ڈی پی اوز ذمہ دار ہوں گے۔

رمضان المبارک کے دوران روزہ داروں کی سہولت کیلئے سحری و افطاری کیلئے دسترخوان بھی لگائے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ماہ رمضان میں کسی بھی پھل، سبزی یا دال کی قلت پیدا نہیں ہونی دی جائے گی ۔اس ضمن میں متعلقہ محکمے پیشگی اقدامات کرکے جامع میکانزم بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ رمضان بازاروں میں محکمہ زراعت کی فیئرپرائس شاپس بھی لگائی جائیں گی اور ان فیئرپرائس شاپس پر اشیاء مارکیٹ کی نسبت سستے داموں دستیاب ہوں گی۔

رمضان المبارک کے دوران اٹھائے گئے اقدامات کامقصد عام آدمی کو ریلیف فراہم کرنا ہے ا س سلسلے میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھی جائے گی اور اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی کے ساتھ معیار پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔اشیائے ضروریہ کے معیار پرکسی قسم کا سمجھوتہ قبول نہ ہوگا۔انہوں نے ہدایت کی کہ رمضان بازاروں میں اشیاء کی قیمتوں کو ڈیجیٹل بورڈ کے ذریعے ڈسپلے کیا جائے گا اور رمضان بازاروں میں آنیوالے شہریوں کو سہولتوں کی فراہمی کو بھی یقینی بنایا جائے۔ ضلع کی سطح پر پرائس کنٹرول کمیٹیاں بھی تشکیل دے دی گئی ہیں ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :