فیصل آباد کے شہری کا دنیا کا سب سے بڑا قرآن تحریر کرنے کا دعویٰ

بدھ مئی 17:26

فیصل آباد کے شہری کا دنیا کا سب سے بڑا قرآن تحریر کرنے کا دعویٰ
فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 مئی2018ء) : فیصل آباد کے ایک شہری نے دنیا کا سب سے بڑا قرآن پاک کا نسخہ تحریر کرنے کا دعویٰ کر دیا ۔میڈیا رپورٹ کے مطابق فیصل آباد کی نثار کالونی کے رہائشی پیر امتیاز حیدر نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے دنیا کا سب سے بڑا قرآن پاک خود اپنے ہاتھ سے تحریر کیا ہے۔ یہ قرآن پاک 10 صفحات پر مشتمل ہے۔پیر امتیاز حیدر کے مطابق 51 فٹ لمبا اور 8 فٹ چوڑا قرآن پاک پورے تین ماہ میں تحریر کیا گیا جس کا وزن 32 کلوگرام ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اس قرآن پاک کو تحریر کرکے انہوں نے امام حسین علیہ اسلام کو خراج عقیدت پیش کیا ہے جنہیں نجیب تلاوت قرآن پاک کا شرف حاصل ہے۔ہاتھ سے تحریر کیے گئے دنیا کے سب سے بڑا قرآن پاک کو ایک مقامی ہال میں نمائش کے لیے رکھا گیا ،کس کی زیارت کے لیے بڑی تعداد میں شہریوں کی آمد کا سلسلہ دن بھر جاری رہا۔

(جاری ہے)

خیال رہے کہ اس سے قبل گجرات کی رہائشی 62 سالہ بزرگ خاتون نے 31 سال میں سوئی دھاگے کی مدد سے قرآن پاک کا خوبصورت نسخہ لکھا تھا۔

گجرات کے محلہ گڑھی احمد آباد کی رہائشی ان 62 سالہ بزرگ خاتون نسیم اختر نے 1987 میں قرآن پاک کے اس نسخے پر کام شروع کیا۔
اس نسخے کی تیاری میں 3 سو گز کا سفید کپڑا، کالے اور گلابی رنگ کے دھاگے اور 25 گز پیپر پٹی کا استعمال کیا گیا۔قرآن پاک کا یہ نسخہ 10 جلدوں پر مشتمل ہے۔ ہر جلد میں تین تین پارے ہیں۔ ہرجلد کی لمبائی 22 انچ جبکہ چوڑائی 15 انچ ہے اور مجموعی وزن 55 کلو ہے۔

بزرگ خاتون نسیم اختر کا کہنا ہے کہ قرآن پاک کے اس نسخے کی ڈبل کڑھائی کے لیے انہوں نے کسی کی مدد حاصل نہیں کی۔اللہ تعالیٰ کی نصرت کے ساتھ ان کا حوصلہ بڑھتا گیا اور انہوں نے کڑھائی کے لیے باوضو رہتے ہوئے ہی اسے مکمل کیا۔ نسیم اختر نے کہا کہ یہ نسخہ شروع کرنے سے قبل میں نے سوچا تھا کہ مکمل ہونے کے بعد میں یہ نسخہ مدینہ شریف کی لائبریری میں لے کر جاؤں گی۔ اور وہاں اس نسخے کو پاکستان کی طرف سے بطور تحفہ پیش کروں گی۔ 724 صفحات پر مشتمل یہ نسخہ نسیم اختر کی دین سے محبت کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

متعلقہ عنوان :