خیبر پختونخوا اور فاٹا میں تعینات ریٹرننگ افسران کی تین روزہ تربیت شروع

جمعرات مئی 18:42

پشاور۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 مئی2018ء) عام انتخابات 2018کے لئے مقرر ریٹرنگ افسران کی تین روزہ تربیت پشاور، سوات اور ڈی آئی خان میں شروع ہوگئی۔ تربیت تین مراحل میں مکمل ہوگی۔ پہلا مرحلہ 17مئی سے 19مئی ، دوسرا مرحلہ 21 مئی سے 23مئی جبکہ تیسرامرحلہ 24 مئی سے 26مئی پر مشتمل ہے۔ خیبر پختونخوا میںماتحت عدلیہ سے جوڈیشل افسران جبکہ فاٹا میں انتظامی افسران کو بطور ریٹرنگ افسران مقرر کیا گیا ہے۔

شیڈول کے مطابق پہلے مرحلے میں آج پرل کانٹینٹل ہوٹل پشاور میں پشاور کے 19چارسدہ کے 07، سرینا ہوٹل سوات میں سوات کے 11، بونیر اور دیر بالا کے 4،4، چترال کے 02 جبکہ نیشنل کلب ڈی آئی خان میں بنوں کے 05، لکی مروت کے 04 ایف آرز کے 01،شمالی وزیرستان کے 01ڈی آئی خان کے 07جبکہ ٹانک کے 02ریٹرننگ افسران کو تربیت دی جارہی ہے۔

(جاری ہے)

21سے 23مئی تک شروع ہونیوالے دوسرے مرحلے میں پرل کانٹینٹل پشاور میں نوشہرہ کے 07، مردان کے 11صوابی کے 07 اور شیلٹن ریزیڈور ہوٹل سوات میں شانگلہ کے 03، دیر پائین کے 07،ملاکنڈکے 03، باجوڑ ایجنسی کے 03 ریٹرننگ افسرا ن کو تربیت دی جائیگی۔

24 سے 26مئی تک شروع ہونیوالے تیسرے مرحلے میں پی سی پشاور میں کرک کے 03، ہنگو کے 03،کوہاٹ کے 04، خیبر ایجنسی کے 02، جبکہ اورکزئی، کرم اور مہمندایجنسی کے 01، 01، جبکہ ہوٹل ون ایبٹ آباد میں ایبٹ آباد کے 06، ہری پور کے 04 مانسہر ہ کے 07، تورغر کے 01، بٹگرام کے 03اورکوہستان کے 04 ریٹرنگ افسران کو تربیت دی جائیگی۔ صوبائی الیکشن کمشنر، خیبر پختونخوا پیر مقبول احمد نے پشاور میں شروع ہونیوالے سیشن کا باقاعدہ افتتاح کیا۔ اپنے مختصر خطاب میں انہوں نے کہا کہ عدلیہ سے ریٹرنگ افسران کا چنائو ان پر بڑااعتماد ہے۔ توقع ہے۔ کہ وہ اپنے فرائض منصبی نہایت ایمانداری اور جانفشانی سے انجام دیں گے۔