الشفا آئی ٹرسٹ نے مستحق مریضوں کے مفت علاج کیلئے زکوة فارم کی پابندی ختم کردی

جمعہ مئی 17:20

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) الشفا آئی ٹرسٹ نے مستحق اور غریب مریضوں کو مزید سہولت دیتے ہوئے مفت علاج کیلئے اپنی متعلقہ یونین کونسل سے زکوة فارم لانے کی پابندی ختم کردی ہے۔ یہ فیصلہ فارم کے حصول میں حائل مشکلات اور فوری علاج کے پیش نظر کیا گیا ہے ۔ ٹرسٹ کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر بریگیڈئیر (ر)رضوان اصغر نے صحافیوں کو بتایا کہ آبادی میں اضافہ کے باعث آنکھوں کے مریضوں کی تعداد میں روز بروز اضافہ ہوتا جارہا ہے اور الشفا ٹرسٹ علاج کو فوری اورآسان بنانے کے مشن پر گامزن ہے ۔

انہوں نے کہا کہ ٹرسٹ پریذیڈنٹ جنرل حامد جاوید کے ویژن اور ہدایت کے مطابق مفت علاج کیلئے زکواة فارم کی عمومی شرط کو بھی ختم کردیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بعض بے وسیلہ اور غریب مریضوں کیلئے اپنی یونین کونسل کیلئے فارم کا حصول مشکل کام ہوتا ہے اور فارم کے چکر میں مریض اپنا معائنہ اورعلاج وقت پر نہیں کرا پاتا ۔

(جاری ہے)

بریگیڈیئر رضوان نے بتایا کہ فارم کی پابندی کے خاتمے سے زیادہ سے زیادہ مستحق لوگ فائدہ اٹھا سکیں گے ۔

انہوں نے کہا کہ الشفا ٹرسٹ کے چاروں ہسپتالوں میں ہرسال آٹھ لاکھ مریضوں کا علاج ہوتا ہے جس میں سے 80 فیصد کا بالکل مفت علاج کیا جاتا ہے ۔ فارم ختم کرنے سے یہ تعداد دس لاکھ تک پہنچ جائے گی ۔انہوں نے کہا کہ اگرچہ مفت مریضوں کی تعداد بڑھنے سے ہسپتال پر مالی دباؤ بڑھے گا لیکن عطیات سے اس دباؤ کو پورا کیا جائے گا ۔یاد رہے کہ الشفا ٹرسٹ گزشتہ پچیس برس سے آنکھوں کے مریضوں کو مکمل علاج کی بہترین سہولتیں فراہم کرنے والا قومی ادارہ ہے اور راوالپنڈی ،کوہاٹ ،مظفرآباد اور سکھر میں جدید طرزکے چار ہسپتال ہر روزہزاروں مریضوں کی بینائی بحال کرنے میں مصروف ہیں ۔

متعلقہ عنوان :