نہتے فلسطینیوں کو بربریت کا نشانہ بنانے پر اسرائیل کے خلاف تحقیقاتی کمیشن کے قیام کا فیصلہ، قرار داد منظور

امریکی و اسرائیلی سخت اعتراضات کے باوجود 2 مخالف،14 غیر جانبدار اور29 نے حق میں ووٹ دیا

ہفتہ مئی 22:17

غزہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 مئی2018ء) اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کمیشن نے نہتے فلسطینیوں کو بربریت کا نشانہ بنانے پر اسرائیل کے خلاف تحقیقاتی کمیشن کے قیام کا فیصلہ کر لیا ،امریکی و اسرائیلی سخت اعتراضات کے باوجود 2 مخالف 14 غیر جانبدار اور 29 حق میں ووٹوں کے ساتھ منظوری دے دی گئی۔

(جاری ہے)

غیر ملکی میڈیا کے مطابق حماس نے اقوام متحدہ کیانسانی حقوق کمیشن نے اسرائیل کیفلسطینی عوا م کے خلاف "اندھا دھند" اور' غیر متوازن' طاقت کے استعمال کی مذمت اور غزہ کی سرحدوں پر رونما ہونے والے واقعات کی تحقیقات کے لیے کونسل کی جانب سے ایک غیر جانبدار کمیشن کی تشکیل کے لیے مجوزہ بل کی منظوری کو 'ایک اہم قدم' کے طور پر پیش کیا ہے۔

حماس کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ میں عالمی برادری اور عالمی فوجداری عدالت سے اسرائیل کے خلاف سرزد کردہ جرائم اورخلاف ورزیوں کے حوالے سے کاروائیاں کرنے اور مظلوم فلسطینی عوام کا ساتھ دینے کی اپیل کی گئی ہے۔واضح رہے کہ ترکی کے بھی مبصر کی حیثیت سے حمایت فراہم کردہ مسودے کی اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل میں کل امریکہ اور اسرائیل کے سخت اعتراضات کے باوجود 2 مخالف 14 غیر جانبدار اور 29 حق میں ووٹوں کے ساتھ منظوری دے دی گئی تھی۔