نواز شریف کا احتساب عدالت میں بیان انتہائی مایوس کن ہے، فوادچوہدری

نواز شریف کو چاہئیے تھا کہ کم از کم دو بنیادی سوالات کا جواب عدالت کو دیتے،کم از کم بتاتے کہ بچوں کی سولہ کمپنیوں میں تین سو ارب روپیہ کہاں سے آیا، مرکزی سیکرٹری اطلاعات پاکستان تحریک انصاف

بدھ مئی 19:59

نواز شریف کا احتساب عدالت میں بیان انتہائی مایوس کن ہے، فوادچوہدری
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 مئی2018ء) پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات و ترجمان فواد چوہدری نے کہا کہ نواز شریف کا احتساب عدالت میں بیان انتہائی مایوس کن ہے، نواز شریف کو چاہئیے تھا کہ کم از کم دو بنیادی سوالات کا جواب عدالت کو دیتے،کم از کم بتاتے کہ بچوں کی سولہ کمپنیوں میں تین سو ارب روپیہ کہاں سے آیا،،نواز شریف بتاتے کہ ایون فیلڈ جائیدادیں کس سرمائے سے خریدی گئیں،سنجیدگی سے عدالتی سوالات کے جواب دینے کی بجائے نواز شریف نے اپنا سیاسی بیانیہ عدالت میں دہرا دیا۔

(جاری ہے)

فواد چوہدری نے مزید کہا کہ سیدھے صاف سوالات کے جواب میں اس شکوے کا کیا مقصد کہ فوج اور عدلیہ نے انکا ساتھ نہیں دیا،،نواز شریف نے عدالت کے 128 سوالوں میں سے کسی ایک کا بھی ڈھنگ سے جواب نہیں دیا،،عدالت کچھ پوچھتی رہی میاں صاحب طوطا مینا کی وہی گھسی پٹی کہانیاں سناتے رہے، میاں صاحب پہلے "سوال گندم جواب چنا" تو کرلیتے ہیں بعد میں رونا دھونا شروع کردیتے ہیں،بات تو وہی ہوئی کہ عدلیہ اور فوج نواز شریف کے احتساب میں کردار ادا نہ کرتے تو پھر سب بالکل ٹھیک ہوتا، اگر نواز شریف سے 300 ارب کا جواب مانگا جائے گا تو پھر ممبئی حملے میں ریاست ملوث اور عدالتیں مشرف کا احتساب نہیں کرتیں،میاں صاحب عدالت میں سیاست گھسیٹ کر آپ نے خود کیساتھ زیادتی کی،اب جو کچھ نواز شریف بو رہے ہیں اسے کاٹنا بھی خود انہی کو ہے، قوم اب کسی طور اس ڈھکوسلے پر یقین نہیں کرے گی کہ نواز شریف کو صفائی کا موقع نہیں دیا گیا۔