ایف آئی اے نے اصغر خان کیس میں نواز شریف کو طلب کرنے کا فیصلہ کر لیا

گزشتہ روز نواز شریف کو طلب نہ کرنے کا عندیہ دیا گیا تھا تاہم آج انہیں طلب کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس جمعہ مئی 00:30

ایف آئی اے نے اصغر خان کیس میں نواز شریف کو طلب کرنے کا فیصلہ کر لیا
اسلام آباد(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔24 مئی 2018ء) ایف آئی اے نے اصغر خان کیس میں نواز شریف کو طلب کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ گزشتہ روز نواز شریف کو طلب نہ کرنے کا عندیہ دیا گیا تھا تاہم آج انہیں طلب کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق 1990 میں اسلامی اتحاد بنانے اور عام انتخابات میں دھاندلی کرنے کے لیے سیاستدانوں میں رقوم تقسیم کی گئی تھیں۔

اس سے متعلق ایئر فورس کے سابق سربراہ اصغر خان مرحوم نے سپریم کورٹ میں درخواست دی تھی۔ 2012 میں فاضل عدالت نے اس کیس کا فیصلہ سنایا تھا۔اس فیصلے کے مطابق اسلامی جمہوری اتحاد کی تشکیل کے لیے مسلم لیگ (ن) کے قائد میاں نواز شریف سمیت دیگر سیاست دانوں میں رقوم کی تقسیم اور 1990 کے انتخابات میں دھاندلی کی ذمہ داری مرزا اسلم بیگ اور آئی ایس آئی کے سابق سربراہ لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ اسد درنی پر عائد کی تھی اور ان کے خلاف کارروائی کا بھی حکم دیا تھا۔

(جاری ہے)

مرزا اسلم بیگ اور اسد درانی نے سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں ہی نظرثانی اپیل دائر کر رکھی تھی جسے عدالت مسترد کرچکی ہے۔چند روز قبل اصغر خان کیس کو نئے سے سے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا تھا اور سپریم کورٹ احکامات کی روشنی میں ایف آئی اے نے اصغر خان کیس میں تحقیقات کیلئے پانچ رکنی کمیٹی تشکیل دیدی گئی تھی۔جس کے مطابق ایڈیشنل ڈی جی ایف آئی اے احسان صادق کمیٹی کے سربراہ ہوں گے۔

کمیٹی کو جلد از جلد انکوائری مکمل اور پیشرفت رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔گزشتہ روز کی خبروں کے مطابق ایف آئی اے نے 1990 کے انتخابات میں مبینہ طور پرآئی ایس آئی سے رقم وصول کرنے سے متعلق اصغر خان کیس میں ٹھوس شواہد موصول ہونے تک سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کو سمن نہ جاری کرنے کا فیصلہ کرلیا۔تا ہم اب نجی ٹی وی کی ایک خبر کے مطابق ایف آئی اے نے اصغر خان کیس میں نواز شریف کو طلب کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے اور جلد اس حوالے سے ثمن جاری کیا جائے گا۔