پاکستان کا قیام اسلام کی بنیاد پر ہوا اور مجلس عمل کا بیانیہ اس مقصد کے گرد گھومتا ہے‘مفتی کفایت اللہ

عوام کو بھولا ہوا سبق یاد دلا کر انتخابات میں انشاء اللہ تاریخی کامیابی حاصل کرکے سامراجی قوتوں کے عزائم کو خاک میں ملا دیں گے

اتوار مئی 13:30

مانسہرہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 مئی2018ء) متحدہ مجلس عمل اور جمعیت علماء اسلام کے صوبائی راہنما مفتی کفایت اللہ نے کہا ہے کہ پاکستان کا قیام اسلام کی بنیاد پر ہوا اور مجلس عمل کا بیانیہ اس مقصد کے گرد گھومتا ہے عوام کو بھولا ہوا سبق یاد دلا کر انتخابات میں انشاء اللہ تاریخی کامیابی حاصل کرکے سامراجی قوتوں کے عزائم کو خاک میں ملا دیں گئے۔

وہ ضلع مانسہرہ کے مختلف مقامات مسوال ، کنیٹ ، شہیلیہ ، بیدڑہ ، پھلڑہ ، پانو ڈھیری ، بلہگ بالا ، موڑبفہ اور دیگر مقامات پر منعقدہ اجتماعات سے خطاب کر رہے تھے انہوں نے کہا کہ پاکستان میں مغربیت لانی کی کوشش کی جارہی ہے جو ہمارے لئے بڑا چیلنج ہے ان چیلنجوں کو سامنامتحدہ قوت سے کرنے کیلئے مذہبی قیادت میدانِ عمل میں ہے انہوںنے کہا کہ علماء اور مذہبی قوتیں ملک کے نظریاتی سرحدوں کے محافظ ہیں اور مجلس عمل کا اتحاد ہی طاغوتی اور سیکولرقوتوںکے راستے میں رکاوٹ ہو سکتا ہے انہوںنے کہا کہ کرپشن اس ملک کا سب سے بڑا مسئلہ ہے ، رمضان المبارک میں اپنے گناہوں کی بخشش کے ساتھ ساتھ ملک کو کرپٹ عناصر سے نجات دلانے کیلئے عہد کرنا چاہے ،دولت کے بل بوتے پر عوام کا ضمیر خریدنے والوں کو مایوسی کے سوا کچھ نہیں ملے گا۔

(جاری ہے)

انہوں نے کارکنوں پر زور دیا کہ وہ انتخابی مہم کو جذباتی اور الزامی آلودگی سے پاک رکھ کر خوش اسلوبی سے چلائیں اورمثبت انداز میں اپنا موقف عوام کے سامنے پیش کریں انہوں نے کہا کہ ایم ایم اے کے قیام سے ملک کی سیاست پر دوررس نتائج مرتب ہونے کی اُمید ہے ملک کو طاغوتی اور عالمی سازشوں سے پاک کرنے کیلئے مذہبی قیادت پر اعتماد کرنا ہوگا ۔