ْ الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کی نگرانی کرنیوالے مبصرین کیلئے 14 نکاتی ضابطہ اخلاق جاری کردیا

اجازت نامے کے بغیر مبصرین کو انتخابی عمل کے مشاہدے کی اجازت نہیں ہوگی، پاکستان کی سالمیت کے ساتھ عوام کے بنیادی حقوق کا خیال رکھنا ہوگا ،میڈیا پر انتخابی عمل سے متعلق ذاتی رائے کا اظہار نہیں کرسکیں گے،الیکشن کمیشن

جمعرات مئی 18:01

ْ الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کی نگرانی کرنیوالے مبصرین کیلئے 14 نکاتی ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 31 مئی2018ء) الیکشن کمیشن نے آئندہ عام انتخابات کی نگرانی کرنے والے مبصرین کے لیے 14 نکاتی ضابطہ اخلاق جاری کردیا جس میں کہا گیا ہے کہ اجازت نامے کے بغیر مبصرین کو انتخابی عمل کے مشاہدے کی اجازت نہیں ہوگی،مبصرین کو پاکستان کی سالمیت کے ساتھ عوام کے بنیادی حقوق کا خیال رکھنا ہوگا ،مبصرین میڈیا پر انتخابی عمل سے متعلق ذاتی رائے کا اظہار نہیں کرسکیں گے۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن نے آئندہ عام انتخابات کی نگرانی کرنے والے مبصرین کے لیے 14 نکاتی ضابطہ اخلاق جاری کردیا ہے جس کے مطابق مبصرین کو اجازت نامے کے بغیر انتخابی عمل کے مشاہدے کی اجازت نہیں ہوگی اور اجازت نامے کو نمایاں طور پر آویزاں کرنا ہوگا۔ضابطہ اخلاق میں کہا گیا ہے کہ مبصرین کو پاکستان کی سالمیت کے ساتھ عوام کے بنیادی حقوق کا خیال رکھنا ہوگا اور مبصرین انتخابی اہلکاروں کے اختیارات کا احترام کریں گے۔

(جاری ہے)

ضابطہ اخلاق کے مطابق مبصرین الیکشن کمیشن کی ہدایات پر عمل کرنے کے پابند ہوں گے اور ان کے مشاہدات مکمل غیر سیاسی، غیر جانبدار اور معروضی ہونے چاہیے۔۔الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری ضابطہ اخلاق میں مزید کہا گیا ہے کہ مبصرین میڈیا پر انتخابی عمل سے متعلق ذاتی رائے کا اظہار نہیں کرسکیں گے۔یاد رہے کہ ملک میں آئندہ عام انتخابات 25 جولائی کو ہوں گے۔