قومی اسمبلی نے حکومت کے 182 ،ْ 23 نجی بل منظور کیے ،ْفافن نے قومی اسمبلی کی کارکردگی رپورٹ جاری کردی

جمعہ جون 22:42

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 جون2018ء) فری اینڈ فیئر الیکشن نیٹ ورک (فافن) نے 14ویں قومی اسمبلی کی کارکردگی رپورٹ جاری کردی ہے جس کے مطابق قومی اسمبلی نے حکومت کے 182 جبکہ 23 نجی بل منظور کیے۔رپورٹ میں بتایا گیا کہ قومی اسمبلی نے پانچ آئینی ترامیم منظور کیں جن میں فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کرنے اور قومی اسمبلی کی دوبارہ نشستیں مقرر کرنے کی آئینی ترامیم بھی شامل ہیں۔

(جاری ہے)

فافن کی رپورٹ کے مطابق متحدہ قومی موونٹ ((ایم کیو ایم)) کے ممبران نے 75، مسلم لیگ (ن )نے 53، پیپلز پارٹی نے 33 اور پی ٹی آئی نے 26 نجی بلز پیش کیے۔۔قومی اسمبلی میں ممبران نے 13 ہزار 912 سوالات پوچھے جن میں سے حکومت نے 10ہزار 926 سوالات کے جواب دئیے۔فافن کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ خواتین ارکان نے 57 فیصد جبکہ مرد ممبران نے 43 فیصد سوالات پوچھے۔۔قومی اسمبلی میں 533 توجہ دلاؤ نوٹس اور 45 تحاریک بحث کے لیے پیش کی گئیں ،ْآخری سال میں پارلیمان کی حاضری 65سے کم ہو کر 55 فیصد پر آ گئی، قومی اسمبلی نے دو بار اسپیکر اور دو مرتبہ وزیر اعظم کا چناؤ کیا۔رپورٹ کے مطابق ایوان میں کورم کی 159 بار نشاندہی کی گئی۔