زراعت کو ترقی دیکر ملک کو معاشی بحران سے نکالا جاسکتاہے، ماہرین

اتوار جون 12:30

قصور۔3 جون(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 جون2018ء) معاشی ماہرین نے کہا ہے کہ زراعت کو ترقی دیکر ملک کو معاشی بحران سے نکالا جاسکتاہے‘ معاشی بحران اورتجارتی خسارہ ختم کرنے کیلئے فائدہ مند زرعی اجناس کو فروغ دینا وقت کی ضرورت ہے‘پاکستان زرعی اجناس کو عالمی معیارکیمطابق کاشت کرکے بڑے پیمانے پر برآمدات کرسکتاہے ‘زیتون وادی کی طرح دیگر زرعی اجناس کیلئے بھی وادیاں قائم کی جائیں تاکہ ہم تیلداراجناس برآمدکرسکیں۔

معاشی ماہرین نے کہا کہ خوردنی تیل کا درآمدی بل کرنے کیلئے حکومتی اقدامات قابل ستائش ہیں ‘ تین کھرب روپے کا خوردنی تیل درآمد کرنا ملکی معیشت پربوجھ ہے ہم یہ تیل خود پیداکرکے نہ صرف اپنی ضرورت پوری کرسکتے ہیں بلکہ اسے برآمد بھی کرنے کے قابل ہوجائینگے‘ تیلدار اجناس کی فروغ کیلئے محکمہ زراعت کی مہم قابل ستائش ہے‘ اسوقت صوبہ پنجاب میں سورج مکھی کی کاشت کی مہم کامیابی سے جاری رہی اور کینولہ کے کاشتکار اس فصل سے بھاری منافع کمایاہے۔

(جاری ہے)

یہ بات نہایت خو ش آئندہے کہ حکومت پنجاب کسان پیکیج کے تحت سورج مکھی کے کاشتکاروں کو کروڑوں رپوے سبسڈی فراہم کی گئی اس سبسڈی سکیم کے تحت سورج مکھی کی نہ صرف پیداوار میں اضافہ ہوگا بلکہ ہمارا ملک خوردنی تیل کی پیداوارمیں بھی خودکفیل ہوجائیگا‘ پاکستان ہر سال 300 ارب روپے کا خوردنی تیل درآمدکرتاہے ‘تیلدار اجناس کی اس مہم کے نتیجے میں ملکی خوردنی تیل کا درآمدی بل میں خاطرخواہ کمی آئے گی۔