سپریم کورٹ نے چیئرمین پیمرا کی تعیناتی پر نوٹس لینے پر سیکرٹری الیکشن کمیشن طلب کر لیا

چیئرمین پیمرا کی تقرری پرقدغن کیسے لگ سکتی ہی چیئرمین پیمراکی تقرری کیلئے بنائی گئی کمیٹی میں غیرجانبدارلوگ تھے‘کابینہ نے پیمراقانون میں ترمیم کی منظوری دیدی ہے تو نگران حکومت آرڈیننس جاری کرے چیف جسٹس کے دوران سماعت ریمارکس

بدھ جون 12:08

سپریم کورٹ نے چیئرمین پیمرا کی تعیناتی پر نوٹس لینے پر سیکرٹری الیکشن ..
اسلا م آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) سپریم کورٹ نے چیئرمین پیمرا کی تعیناتی پر نوٹس لینے پر سیکرٹری الیکشن کمیشن کو طلب کر لیا جبکہ چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے ہیں کہ چیئرمین پیمرا کی تقرری پرقدغن کیسے لگ سکتی ہی چیئرمین پیمراکی تقرری کیلئے بنائی گئی کمیٹی میں غیرجانبدارلوگ تھے‘کابینہ نے پیمراقانون میں ترمیم کی منظوری دیدی ہے تو نگران حکومت آرڈیننس جاری کرے۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان کی سربراہی میں بنچ نے چیئرمین پیمراتقرری کیس کی سماعت کی،،عدالت نے چیئرمین پیمراکی تقرری پرنوٹس لینے پرسیکرٹری الیکشن کمیشن کو طلب کرتے ہوئے کہا کہ چیئرمین پیمرا کی تقرری پرقدغن کیسے لگ سکتی ہی چیئرمین پیمراکی تقرری کیلئے بنائی گئی کمیٹی میں غیرجانبدارلوگ تھے۔منتخب چیئرمین پیمرا مرزا سلیم بیگ نے کہا کہ چیئرمین بناتوسرکاری نوکری چھوڑدوں گا،اس پر چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ مرزا صاحب !آپ پرجواعتمادکیا ہے اسے توڑنانہیں،،چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ پیمراقانون میں ترمیم کے معاملے کاکیابنا ،سیکرٹری اطلاعات نے بتایا کہ کابینہ نے قانون میں ترمیم کی منظوری دیدی،،چیف جسٹس نے کہا کہ کابینہ نے منظوری دے دی تونگران حکومت آرڈیننس جاری کرے۔