نواز شریف اور شاہد خاقان عباسی کیخلاف بغاوت کی کارروائی کے لیے درخواست پر فل بنچ نے درخواست گزار وکیل کو درخواست میں ترمیم کی ہدایت کر دی

جمعرات جون 20:00

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 جون2018ء) سابق وزیر اعظم نواز شریف اور شاہد خاقان عباسی کیخلاف بغاوت کی کارروائی کے لیے درخواست پر فل بنچ نے درخواست گزار وکیل کو درخواست میں ترمیم کی ہدایت کر دی۔ درخواست میں سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو فریق بنایاگیا ہے، جسٹس سید مظاہر علی اکبر نقوی کی سربراہی میں 3رکنی فل بنچ نے سماعت کی ۔

عدالت نے قرار دیا کہ شاہد خاقان عباسی اب وزیر اعظم نہیں رہے۔ درخواست میں ترمیم کر کے شاہد خاقان عباسی کے نام کے ساتھ وزیر اعظم کا لفظ حذف کریں۔

(جاری ہے)

درخواست گزار کا موقف تھا کہ بطور وزیر اعظم اہم اجلاس کی معلومات فراہم کرنا شاہد خاقان عباسی کا غیر ذمے دارانہ فعل ہے۔ درخواست سابق وزیر اعظم نواز شریف کے متنازع بیان کو بنیاد بناکر دائر کی گئی ہے ۔ درخواست گزار کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے متنازعہ انٹرویو دیکر ملک و قوم سے غداری کی۔ نواز شریف کیخلاف بغاوت کے الزام کے تحت کارروائی کی جائے۔ شاہد خاقان عباسی نے قومی سلامتی کمیٹی کی کارروائی سابق وزیر اعظم کو بتا کر حلف کی پاسداری نہیں کی۔ وزیر اعظم کیخلاف آئین کے آرٹیکل چھ کے تحت کارروائی کی جائے۔