ایران کو جوہری ہتھیار بنانے پر دنیا کا قہر برداشت کرنا پڑیگا،امریکی وزیرخارجہ

عالمی معاہدہ کی صورت کچھ بھی ہو لیکن جوہری ہتھیارایران کے مفاد میں نہیں ہے،مائیک پومپیوکا انٹرویو

اتوار جون 13:50

واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 جون2018ء) امریکی سیکریٹری اسٹیٹ مائیک پومپیو نے ایران کو جوہری ہتھیار کی تیاری سے متعلق خبردار کیا ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ اگر ایران نے جوہری منصوبے پر کام بند نہیں کیا تو پوری دنیا کا قہر برداشت کرنے کے لیے تیار ہو جائے، اور اگر منصوبے پر عمل سے باز رہتا ہے تو امریکا کو کسی ملک کے خلاف عسکری کارروائی کی ضرورت نہیں رہیگی۔

انہوں نے کہا کہ ایران کے ساتھ عالمی معاہدہ کی صورت کچھ بھی ہو لیکن جوہری ہتھیارتہران کے مفاد میں نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ مجھے امید ہے تہران کو سمجھ میں آگیا کہ اگر انہوں ںے جوہری منصوبہ لپیٹ کر نہیں رکھا تو پوری دنیا کا غصہ ان پر گرے گا۔مائیک پومپیو کا کہنا تھا کہ اگر انہوں نے مزید چند ایک سینٹری جیوجز کا استعمال کیا، اگر انہوں نے ہتھیار بنانے کا منصوبہ شروع کیا تو پوری دنیا کے لیے یہ ناقابل برداشت ہوگا اور یقیناً یہ ایران کے مفاد میں بالکل ٹھیک نہیں ہوگا۔

(جاری ہے)

انہوں نے واضح کیا کہ میں ایران کے خلاف امریکی عسکری کارروائی کی بات نہیں کررہا۔سیکریٹری اسٹیٹ کا کہنا تھا کہ جب میں غصے کی بات کررہا ہوں تو ایسے عسکری کارروائی نہیں سمجھا جائے بلکہ میرا مطلب ایران پر انتہائی سخت اقتصادی پابندیاں ہیں، مجھے امید ایس کچھ نہیں ہوگا کیونکہ یہ کسی کے مفاد میں بھی اچھا نہیں ہوگا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے دوٹوک کہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا بیان اس ضمن میں بالکل واضح ہے کہ ایران جوہری ہتھیار حاصل کر سکے گا۔