سردیوں میں گیس کی لوڈ شیڈنگ کا شیڈول جاری

دن کے اوقات میں گیس لوڈ شیڈنگ کی جائے گی تاہم صبح شام کے اوقات میں گھریلو صارفین کے لیے گیس لوڈ شیڈ نگ نہیں ہو گی

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعہ نومبر 13:24

سردیوں میں گیس کی لوڈ شیڈنگ کا شیڈول جاری
سلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 9نومبر 2018ء) : موسم سرما کے تین ماہ کے لیے گھریلو صارفین کو گیس لوڈ شیڈنگ کا سامنا ہو گا تاہم صبح و شام کے اوقات میں گھریلو صارفین کے لیے لوڈ شیڈنگ نہیں ہو گی۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ سردیوں کے لیے گیس لوڈ میجمنٹ پلان تیار کر لیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق گھریلو صارفین کو دن کے اوقات میں گیس لوڈ شیڈنگ کا سامنا رہے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ دن کے اوقات میں گیس لوڈ شیڈنگ کی جائے گی تاہم صبح شام کے اوقات میں گھریلو صارفین کے لیے گیس لوڈ شیڈ نگ نہیں ہو گی۔ذرائع کے مطابق درآمدی صنعتوں کو 3 سو ایم ایم سی ایف ڈی گیس فراہم کی جائے۔دیگر صنعتوں کو سردیوں میں گیس کی فراہمی بند رہے گی،مذکورہ گیس لوڈ مینجمنٹ پلان کا نفاذ 3ماہ یعنی دسمبر سے مارچ تک کے لیے ہو گا۔

(جاری ہے)

جب کہ دوسری جانب میڈیا رپورٹس میں بتایا جا رہا ہے کہ ملک کے مختلف شہروں میں موسم سرما کے آغاز کے ساتھ ہی سوئی گیس کی لوڈشیڈنگ شروع ہو گئی جس میں کھانے پکانے کے اوقات کار میںسوئی گیس کی بندش سے ہوٹلوں اور تندروں پر رش بڑھنے لگا ہے۔ مکینیوں اور گھریلو خواتین نے میڈیا کو بتایا کہ اب موسم میں تبدیلی کے ساتھ ہی ناشتہ،دوپہر کا کھانا اور رات کو ڈنر کے اوقات کار سمیت دن بھر سوئی گیس پریشر میں کمی اور کئی کئی گھنٹے بندش نے نظام زندگی معطل کر دیا ہے اور گھروں کے چولہے ٹھنڈے ہو جانے سے لوگ ہوٹلوں سے کھانے پینے پر مجبور ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ کافی عرصہ سے سوئی گیس کی صورت حال خراب رہنے کے بعد سابق حکومت نے سوئی گیس پریشر کو بہتر بنایا لیکن اب دن بھر سوئی گیس کی قلت نے عوام کو سابق حکومت کی یاد تازہ کر دی ہے۔جب کہ گیس کی قیمتوں میں بھی اضافہ کر دیا گیا ہے۔ پچھلے ماہ آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے گیس کی قیمتوں میں ایک مرتبہ پھر اضافہ کیا۔ اوگرا کی جانب سے گیس کی قیمتوں میں اضافے کا نوٹی فکیشن بھی جاری کیا۔

سرکاری اسکولز، کالجز، یونیورسٹیز ، دفاتر اور اسپتالوں کے لیے گیس مزید مہنگی کر دی گئی۔ رہائشی کالونیوں اور فلاحی اداروں کے لیے بھی گیس مزید مہنگی کر دی گئی ہے۔ تمام صارفین کے لیے ماہانہ گیس فکسڈ چارجز 3 ہزار 6 سو روپے بڑھا دئے گئے۔ تمام اداروں کے لیے فکسڈ چارجز ایک ہزار 53 روپے سے بڑھا کر 4 ہزار 680 روپے کر دئے گئے۔ کمرشل صارفین ، کیفے، بیکریز،ملک شاپ، کینٹین، ہوٹلز، تجارتی مال اور سینماؤں کے لیے بھی گیس مہنگی کر دی گئی ہے۔ اوگرا نے ترمیمی بل کا اطلاق فوری طور پر کر دیا ہے اور گیس مہنگی کرنے کا نوٹی فکیشن بھی جاری کر دیا ہے۔