شریف خاندان کا برا وقت سانحہ ماڈل ٹائون سے شروع ہوا : خرم نواز گنڈا پور

قطری خط اوراسمبلی بیان سے انحراف سے ثابت ہو الندن فلیٹس کی کوئی منی ٹریل نہیں نواز شریف کی کرپشن کا دفاع کرنیوالے ترجمان انحراف کے بعد ن لیگ چھوڑ دیں

جمعرات نومبر 23:21

شریف خاندان کا برا وقت سانحہ ماڈل ٹائون سے شروع ہوا : خرم نواز گنڈا پور
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 نومبر2018ء) پاکستان عوامی تحریک کے سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈا پور نے کہا ہے کہ قطری خط اور قومی اسمبلی میں دئیے گئے پالیسی بیان سے انحراف سے ثابت ہو گیا نواز شریف کے پاس لندن فلیٹس اور کمپنیوں کی کوئی منی ٹریل نہیں ہے، قطری خط کو منی ٹریل کے طور پر پیش کرنے اور اس کے دفاع میں زمین آسمان کے قلابے ملانے والے طلال،نہال،دانیال سمیت شریف خاندان کے جملہ ترجمانوں میں رتی برابر بھی شرم ہے تو قوم سے معافی مانگ کر شریف خاندان سے ہمیشہ کیلئے قطع تعلق ہو جائیں کیونکہ نواز شریف کے کہنے پر ڈھٹائی کے ساتھ ا نہوں نے چور کو سعد ثابت کرنے پر توانائیاں خرچ کیں اور قوم کے سامنے ڈھٹائی سے جھوٹ بولتے رہے۔

اسی مجرمانہ رویے کی وجہ سے’’ سارا ٹبر چور ہے‘‘ کے نعرے نے محاورے کی شکل اختیار کی ۔

(جاری ہے)

ملکی تاریخ کا یہ واحد کرپشن کیس ہے جس میں اولاد کرپشن کی ذمہ داری باپ پر اورباپ اولاد پر ڈالتا ہے،وہ گزشتہ روز یہاں پارٹی عہدیداروں سے بات چیت کر رہے تھے۔خرم نواز گنڈا پور نے کہا کہ قوم جاننا چاہتی ہے سوا کروڑ روپے اثاثوں کا مالک مغل بادشاہوں کی طرح زندگی کیسے گزارتا ہی قومی مجرم سے اسکا بھی حساب لیا جائے۔

خرم نواز گنڈا پور نے کہا کہ نواز شریف کا یہ کہنا کہ اسمبلی میں خطاب میری نہیں بیٹے کی دی گئی معلومات پر تھا تو کیا اس کا مطلب یہ ہے کہ بیٹے نے باپ کو غلط معلومات دیں اور انہیں پھنسایا جس باپ کی اولاد باپ سے مخلص نہ ہو اس باپ کو یہ حق پہنچتا ہے کہ وہ کرپشن پر جاری ٹرائل اور سزائوں کی ذمہ داری ریاستی ادارے پر ڈالی انہوں نے مزید کہاکہ جب سے سانحہ ماڈل ٹائون میں بے گناہوں کا خون بہا،شریف خاندان کے عبرتناک انجام کا آغاز ہو گیا،ابھی یہ آغاز ہے اسکی انتہا باقی ہے ملکی اداروں اور عوام کے جان و مال اور خون پسینے کی کمائی سے کھیلنے والے عبرت ناک انجام سے دوچار ہونگے۔انہوں نے کہاکہ آج آدھاشریف خاندان نیب اور احتساب عدالتوں کے پاس اور آدھا مفرور ہے۔