اسلامی ممالک کے سفرا اور جامعات کے سربراہان کی طاہرالقادری سے ملاقاتیں

مسلم امہ کو درپیش چیلنجز سے نمٹنے کیلئے او آئی سی بہترین پلیٹ فارم ہے‘سربراہ عوامی تحریک کی گفتگو

جمعہ اپریل 20:49

اسلامی ممالک کے سفرا اور جامعات کے سربراہان کی طاہرالقادری سے ملاقاتیں
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 12 اپریل2019ء) منہاج القرآن انٹرنیشنل کے قائد ڈاکٹر محمد طاہرالقادری سے ریاض سعودی عرب میں او آئی سی کے دو روزہ اجلاس کے اختتام پر مختلف اسلامی ممالک کے سفرا اور بین الاقوامی شہرت یافتہ جامعات کے سربراہان نے ملاقات کی اور انہوں نے انسداد دہشت گردی کے حوالے سے ان کے تحریر کیے گئے فتوی کی کاپی حاصل کی اور اسے فکری اعتبار سے اسلامی دنیا کی ایک عظیم خدمت قرار دیا۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر محمد طاہرالقادری نے کہا کہ اسلام دین امن ہے اور امن کی یہ تعلیمات ہمیں براہ راست قرآن مجید سے ملتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فروغ امن کیلئے او آئی سی اور اس کے ذیلی فورم اتحاد بین المسلمین اور امہ کو درپیش چیلنجز کے حل کیلئے بہترین ہیں، عالم اسلام کے جملہ دکھتے ہوئے مسائل اس پلیٹ فارم پر زیر بحث آتے رہنے چاہئیں اور اسلامی دنیا کے سکالرز، محققین کو باہم تبادلہ خیال کرتے رہنا چاہیے، گریٹ ڈیبیٹ سے ہی راستے نکلیں گے ۔

(جاری ہے)

دریں اثناء شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری او آئی سی کانفرنس میں شرکت کے بعد گزشتہ روز مدینة المنورہ پہنچے جہاں انہوں نے نماز جمعہ ادا کی اور پاکستان کی سلامتی، خوشحالی، عالم اسلام کے اتحاد کیلئے خصوصی دعا کی، نماز جمعہ کی ادائیگی کے دوران انہیں کوئٹہ دہشت گردی کی افسوسناک خبر ملی، انہوں نے قیمتی جانوں کے ضیاع پر دلی افسوس کااظہار کیا۔

انہوں نے کہا کہ انسانی جانوں کے درپے درندہ صفت عناصر اپنے مذموم مقاصد کیلئے خوف وہراس پھیلارہے ہیں اور پاکستان کو عدم استحکام سے دو چار کرنا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کے عوام نے دہشت گردی کی جنگ میں بڑی قربانیاں دی ہیں اس کے باوجود دہشتگرد پاکستان کے جری اور بہادر عوام کے حوصلے کمزور نہیں کر سکے، انشاء اللہ تعالیٰ آئندہ بھی وہ ایسا نہیں کر سکیں گے، پاکستان کے عوام دہشت گردی کے خلاف متحد اور پرعزم ہیں، وہ جانتے ہیں کہ دہشت گرد عناصر اسلام کے نام پر گمراہی پھیلارہے ہیں حالانکہ اسلام انسانیت کا محافظ دین ہے۔