محکمہ زراعت نے ترشاوہ پھلوں کی بہترین پیداوار کے حصول کیلئے سنگترے اور مالٹے کی منظور شدہ اقسام کا اعلان کردیا، باغبان سنگترے کی اقسام کم بیج والا کنو،ہنی مینڈرین،کلیمنٹائن اور مالٹے کی اقسام سیلیسٹیانہ،مارش ارلی،ٹراکو، نیولینا،مورو بلڈ،اولینڈا ویلنشیاء کی کاشت کو ترجیح دیں

بدھ ستمبر 15:31

فیصل آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 11 ستمبر2019ء) محکمہ زراعت نے ترشاوہ پھلوں کی بہترین پیداوار کے حصول کیلئے سنگترے اور مالٹے کی منظور شدہ اقسام کا اعلان کردیاہے اور کہا ہے کہ باغبان سنگترے کی اقسام کم بیج والا کنو،ہنی مینڈرین،کلیمنٹائن اور مالٹے کی اقسام سیلیسٹیانہ،مارش ارلی،ٹراکو، نیولینا،مورو بلڈ،اولینڈا ویلنشیاء کی کاشت کو ترجیح دیں تاکہ انہیں نہ صرف اعلیٰ معیار کے ترشاوہ پھل کی شاندار پیداوار مل سکے بلکہ بین الاقوامی سطح پر ذائقے کے لحاظ سے انتہائی پسند کی جانیوالی ان اقسام کی زیادہ سے زیادہ بر ۱ٓمد سے قیمتی زر مبادلہ کا حصول بھی ممکن ہوسکے۔

محکمہ کے ترجمان نے بتایا کہ ترشاوہ پودے لگانے کا بہترین وقت اور موسم ستمبر اور اکتوبر کا مہینہ ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ ان مہینوں میں لگائے جانیوالے تر شاوہ پھلوں کے پودے موسم کی چلملاتی دھوپ اور تمازت سے متاثر نہیں ہوتے۔ انہوں نے کہا کہ ان مہینوں میں ترشاوہ پودوں کے مرنے یا مرجھانے کا امکان بھی بہت کم ہوتا ہے۔انہوں نے کہا کہ اسکے برعکس موسم بہار میں لگائے گئے ترشاوہ پھلوں کے پودوں کا گرمی کی شدت اور پانی کی کمی کے باعث مرجانے اور مرجھانے کا خدشہ زیادہ ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ باغبان مزید معلومات یا رہنمائی کیلئے محکمہ زراعت کے عملہ یا ماہرین زراعت سے بھی رابطہ کر سکتے ہیں۔

متعلقہ عنوان :