ڈالر چار ماہ کی کم ترین سطح پر آ گیا

رواں سال جون سے لے کر اب تک ڈالر کی قیمت میں آٹھ روپے65 پیسے کمی ہو چکی ہے،ڈالر 155.35 روپے کا ہو گیا

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعرات نومبر 14:15

ڈالر چار ماہ کی کم ترین سطح پر آ گیا
کراچی (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔14 نومبر  2019ء) ڈالر کی قیمت میں پانچ پیسے کی مزید کمی ہو گئی۔تفصیلات کے مطابق کاروباری ہفتے کے چوتھے روز ڈالر کی قیمت میں مزید پانچ پیسے کی کمی ہوئی ہے جس کے بعد گذشتہ کئی ماہ کی نچلی ترین سطح پر آ گیا ہے۔ایکسچینج کمپنیز ایسوسی ایشن کے مطابق اوپن مارکیٹ میں ڈالر آج 155.35 روپے میں فروخت ہو رہا ہے۔جو کہ گذشتہ روز 155.40 روہے میں دستیاب تھا۔

اسی طرح انٹر بینک میں ڈالر 155.35 روپے فروخت ہو رہا ہے۔رواں سال جون سے لے کر اب تک ڈالر کی قیمت میں آٹھ روپے 65 پیسے کی کمی ہو چکی ہے۔ کاروباری ہفتے کے تیسرے روز ڈالر کی قیمت میں مزید پانچ پیسے کی کمی ہوئی تھی۔زشتہ روز بھی اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں پانچ پیسے کمی ہوئی تھی۔رواں سال جون سے لیکر اب تک ڈالر کی قیمت آٹھ روپے 60 پیسے کم ہوچکی ہے۔

(جاری ہے)

جمعے کے روز اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں 15 روپے کی واضح کمی ہوئی تھی جس کے بعد یہ 155.55 روپے میں فروخت ہوا تھا۔2019 کے آغاز میں ڈالر کی قیمت میں روپے کے مقابلے میں پیش رفت جاری رہی۔ جنوری میں ڈالر 138 روپی93 پیسے، فروری میں 138 روپے 90 پیسے اور مارچ میں 139 روپی10 پیسے پر ٹریڈ کررہا تھا۔ اپریل 2019 میں ڈالر چھلانگ لگا کر 141 روپے 50 پیسے پر آگیا۔

مئی میں 151 روپے اور جون میں تاریخ کی بلند ترین سطح 164روپے پر پہنچ گیا۔جولائی 2019 میں ڈالر کی اڑان رک گئی اور ڈالر کمی کے بعد انٹربینک میں 160 روپے اور اوپن مارکیٹ میں 161 روپے کا ہوگیا۔اگست 2019 میں روپے نے ڈالر کا جم کر مقابلہ کیا اور ڈالر 157.20 روپے تک پہنچ گیا۔ ستمبر 2019 کے اختتام پر ڈالر کی قیمت میں مزید کمی واقع ہوئی اور یہ 156.40 روپے پر پہنچ گیا۔اکتوبر 2019 کے اختتام پر روپے کی قدر مزید بہتر ہوئی اور ڈالر کی قیمت 155.70 روپے رہ گئی۔

متعلقہ عنوان :