کنگنا رناوت کو اوڑیسہ کے ایک وکیل کی جانب سے ریپ کی دھمکیاں

بھارت میں خواتین کو ریپ کی دھمکیوں سے خوفزدہ کرنے کا کلچر عام ہوتا جارہا ہے، جس کی بھینٹ اب اداکارہ بھی چڑھ گئی

جمعرات اکتوبر 12:28

کنگنا رناوت کو اوڑیسہ کے ایک وکیل کی جانب سے ریپ کی دھمکیاں
ممبئی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 22 اکتوبر2020ء) بالی ووڈ کوئن کنگنا رناوت کو اوڑیسہ کے ایک وکیل کی جانب سے ریپ کی دھمکیاں ملی ہیں۔بھارت میں خواتین کو ریپ کی دھمکیوں سے خوفزدہ کرنے کا کلچر عام ہوتا جارہا ہے، جس کی بھینٹ اب اداکارہ بھی چڑھ گئی ہیں۔بالی ووڈ میں اقرباء پروری کے خلاف آواز بلند کرنے اور وزیراعلیٰ مہاراشٹرا کے خلاف کھڑے ہونے سمیت مخلتف معاملات میں آج کل کنگنا رناوت خبروں میں ہیں۔

بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق حال ہی میں انھیں ریاست اوڑیسہ کے ایک وکیل کی جانب سے ریپ کی دھمکیاں ملی ہیں۔کنگنا رناوت اس وقت ریاست ہماچل پردیش میں اپنے آبائی علاقے منالی میں موجود ہیں جنھوں نے خود کو ملنے والی اس دھمکی پر کوئی ردِ عمل نہیں دیا۔

(جاری ہے)

مذکورہ دھمکی انھیں فیس بک پر اس وقت ملی جب انھوں نے اپنی پوسٹ میں ان کے خلاف ممبئی میں درج ہونے والی ایف آئی آر کا ذکر کیا۔

بعد ازاں دھمکی دینے والے شخص نے کہا کہ ان کا اکاؤنٹ ہیک ہوچکا ہے اور کنگنا کو دھمکی انھوں نے نہیں دی۔اس شخص کا یہ بھی کہنا تھا کہ اس کے خواتین یا پھر کسی بھی قوم سے متعلق ان کے ایسے نظریات نہیں ہیں، میں صدمے میں ہوں اور معافی مانگنا چاہتا ہوں۔واضح رہے کہ کنگنا اس وقت بالی ووڈ نگری سے دور ہماچل پردیشن میں اپنے اہلِ خانہ کے ساتھ نجی فنکشنز میں مصروف ہیں۔وہ گزشتہ دو ماہ سے بھارت میں مختلف موضوعات پر آواز اٹھاتی رہی ہیں جبکہ انھوں نے سشانت سنگھ راجپوت کی موت کے بعد پیدا ہونے والے تنازعات سے متعلق بھی آواز بلند کرتی رہی ہیں۔خیال رہے کہ حال ہی میں ان کے خلاف ریاست کرناٹک میں مذہبی منافرت پھیلانے کا مقدمہ بھی درج کیا گیا تھا۔