پنجاب یونیورسٹی کی ماحولیاتی لیبارٹری اقوام متحدہ کی ذیلی تنظیم کا حصہ بن گئی

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 17 جون2021ء) پنجاب یونیورسٹی ریموٹ سینسنگ ، جیوگرافکل انفارمیشن سسٹم کلائیمیٹک ریسرچ لیب نیشنل سنٹر آف جی آئی ایس اور سپیس اپلیکییشنز نے انسٹیٹیوشنل کیپسیٹی بلڈنگ پروفیشنل ڈیویلپمنٹ پروگرام کے تحت بحری سائنس میں اقوام متحدہ کے پارٹنر کا درجہ حاصل کر لیا۔یونیسکو کی یہ تنظیم انٹر گورنمنٹل اوشن گرافک کمیشن کے تحت یو این ڈیکڈ آف اوشن سائنس اینڈ سسٹین ایبل ڈویلپمنٹ کے قیام کا مقصد سمندر کے ماحول کو بہتر بنانے کے لئے کام کر رہی ہے۔

(جاری ہے)

ریموٹ سینسنگ ، جیوگرافکل انفارمیشن سسٹم کلائیمیٹک ریسرچ لیب کا مقصد بحر ہند اور پاکستانی ساحلی علاقوں کے ماحولیاتی نظام کو بہتر بنانے کیلئے سمندری سائنس اورٹیکنالوجی ، سمندری پالیسی اور پائیدار ترقی کیلئے کام کرنا ہے اورحولیاتی تبدیلی کے تناظر میں سیٹلائیٹ ریموٹ سنسنگ اور مقامی تکنیکس کے استعمال سے پانی اور ہوا کی آلودگی کے اثرات کو کم کرنے کیلئے کردار ادا کرنا ہے۔ یہ کامیابی وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی پروفیسر نیازاحمد کے انڈسٹری اور اکیڈیما کے درمیان مضبوط تعلقات کے ویژن کا نتیجہ ہے۔

Your Thoughts and Comments