Aurato Ki Seat - Joke No. 1914

عورتوں کی سیٹ - لطیفہ نمبر 1914

سر دار پر نام سنگھ نے ایک روز ، دن ڈھلنے سے پہلے ہی شراب چڑھالی تھی، اسے کہیں جانا تھا، بس میں سوار ہوا تو اسے کوئی سیٹ خالی نظر نہ آئی، عورتوں کے لئے مخصوص ایک سیٹ خالی نظر آئی، وہ اس پر ہی براجمان ہو گیا۔ اگلے سٹاپ پر ایک سر دارنی بس میں چڑھی تو ایک مرد کو عورتوں کی سیٹ پر بیٹھے دیکھ کر آگ بگولا ہو گئی، کہنے لگی ”بھائی صاحب… ایہہ سیٹ تیویاں (عورتوں) واسطے ہے“ پرنام سنگھ بولا”تے فیر… میں کیہہ کراں“ سر دارنی کو اور غصہ آیا، سر دار جی کے سر کے اوپر لگی تختی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے بولی بھائی صاحب… اوہ دیکھو… تہاڈے سرتے لکھیا ہے، ایہہ عورتوں دی سیٹ ہے!“ پر نام سنگھ اسی اطمینان سے بولا”بھین جی… فیر جتھے لکھیا ہو یا اے… تسی او تھے ای بیٹھ جاؤ!“

مزید لطیفے

سب سے اونچا

Sab se uncha

پروفیسر اپنے کسی دوست کے

Prof apne kisi dost ke

ایک شخص

Aik Shakhs

گائیڈ

guide

دوسری جنگ عظیم

dosri jang azeem

ماں بیٹے سے

Maa bete se

ڈاکڑ

Doctor

ایک دولتمند

Aik dolat mand

آزادی کے لیے قربانی

azadi ke liye qurbani

ریڈیو

radio

چار پائی

Charpai

90سال

90 Saal

Your Thoughts and Comments