Central Jail - Joke No. 1635

سینٹرل جیل - لطیفہ نمبر 1635

چوری کے ملزم نے عدالت میں اپنی صفائی میں کہا:”جناب! میں اس بھری دنیا میں اکیلا ہوں۔ کھانے کو روٹی نہیں، رہنے کو مکان نہیں اور بہت عرصے سے بے روز گار ہوں، اورنہ میرا کوئی دوست ہے۔ “یہ سن کر جج نے کہا:”واقعی تمہاری کہانی بڑی دکھ بھری ہے، لہٰذا میں تمہیں ایسی جگہ بھیج رہا ہوں، جہاں تمہیں رہنے کی جگہ ، دوقت کا کھانا، دوست بنانے کا موقع ملے گا اوریہ سب کچھ سرکاری خرچ پر ہوگا۔ “ ملزم نے خوش ہو کر پوچھا:”کہاں ؟“ جج بولا:”سینٹرل جیل میں۔ “

مزید لطیفے

اسٹیج ڈرامہ

stage drama

چوہیا

chuhiya

ڈیڈی

Dady

دماغ غیر حاضر

Dimagh Ghair Hazir

شکایت کا خط

Shikayat ka khat

ایک عورت بہت غصے؟

aik aurat bahut ghusay?

بچے نے باپ سے

Bache ne baap se

پیریڈ

Period

مجرم

Mujram

یہودی ایک فرانسیسی

yahoodi aik francesi

سیاح کسان سے

Sayyah Kisan Se

شکاری

Shikari

Your Thoughts and Comments