ایران مافیاؤں کا سرپرست ، فلسطینیوں کی مدد فرض ہے، شاہ اردن

خطے میں جاری بحران عرب اقوام کی سلامتی کا حصہ، انہیں ہرصورت میں حل کرنا ہوگا،سیکرٹری جنرل عرب لیگ

پیر اپریل 11:59

ظہران (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 اپریل2018ء) اردن کے فرمانروا شاہ عبداللہ دوم نے کہا ہے کہ فلسطینیوں کی ہر طرح کی حمایت ہم سب پر واجب ہے جبکہ اس موقع پر عرب لیگ کے سیکرٹری جنرل احمد ابو الغیط نے کہاہے کہ خطے میں جاری بحران عرب اقوام کی سلامتی کا حصہ ہیں اور انہیں ہرصورت میں حل کرنا ہوگا،اس موقع پر الظہران میں ہونے والی عرب سربراہ کانفرنس سے خطاب میں اردن کے فرمانروا شاہ عبداللہ دوم نے کہا کہ فلسطینیوں کی ہر طرح کی حمایت ہم سب پر واجب ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ القدس پر فلسطینیوں، عربوں اور مسلمانوں کو ابدی اور دائمی حق ہے جسے کوئی نہیں چھین سکتا۔ فلسطینی قوم کو ان کی آزاد اور خود مختار ریاست کے قیام میں ان کی ہرطرح سے مدد کی جانی چاہیے۔انہوں نے شام میں داعش کی شکست پر عرب ممالک اور عالمی برادری کو مبارک باد پیش کی اور شام میں جاری تنازع کے پر امن حل کی ضرورت پر زور دیا۔

(جاری ہے)

سعودی عرب کی میزبانی میں ہونے والی عرب سربراہ کانفرنس سے خطاب میں عرب لیگ کے سیکرٹری جنرل احمد ابو الغیط نے کہا کہ خطے میں جاری بحران عرب اقوام کی سلامتی کا حصہ ہیں اور انہیں ہرصورت میں حل کرنا ہوگا۔ان کا کہنا تھا کہ خطے کو درپیش بحران تمام عرب ممالک کے نزدیک یکساں اہمیت کے حامل ہونے چاہئیں اوران کا حل سب کے لیے اولین ترجیح ہو۔ تمام عرب ممالک کو مشترکہ علاقائی مسائل کے حل کے لیے موثر مذاکرات کی پالیسی اپنانے کی ضرورت ہے۔

احمد ابو الغیط کا کہنا تھا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے القدس کے بارے میں متنازع اعلان کے بعد عرب ممالک کی طرف سے کم زوری کا مظاہرہ کیا گیا۔ تمام عرب ممالک کو قضیہ فلسطین کے حوالے سے صدر محمود عباس کے ویڑن کی حمایت کرنی چاہیے۔انہوں نے خطے میں ایرانی مداخلت کی مذمت کی اور کہا کہ ایرانی مداخلت خطے میں عرب ممالک کے لیے نیک شگون نہیں۔ ایران یمن میں ایک مخصوص مافیا کی مدد کررہا ہے جس نے سعودی عرب کی سلامتی کو نقصان پہنچایا۔

متعلقہ عنوان :