اسرائیلی فوج غزہ میں نہتے فلسطینی مظاہرین کا قتل عام بند کرے، ایمنسٹی انٹرنیشنل کا مطالبہ

منگل اپریل 17:47

مقبوضہ بیت المقدس (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اپریل2018ء) عالمی انسانی حقوق تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں قابض صہیونی فوج کے ہاتھوں نہتے فلسطینی مظاہرین کے قتل عام کا سلسلہ بند کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔ایمنسٹی انٹرنیشنل نے ایک بیان میں 30 مارچ کے بعد حق واپسی کیلئے احتجاج کرنیوالے فلسطینیوں پر اسرائیلی فوج کے وحشیانہ طاقت کے استعمال اور نہتے مظاہرین کے قتل عام کی آزادانہ تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔

(جاری ہے)

بیان میں کہا گیا ہے کہ تحقیقاتی اداروں اور ذرائع ابلاغ میں آنیوالی رپورٹس سے ثابت ہوتا ہے کہ اسرائیلی فوج غزہ کی سرحد پرجمع ہونیوالے مظاہرین کے خلاف طاقت کا اندھا دھند استعمال کررہاہے۔ گزشتہ تین ہفتوں کے دوران اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے تین بچوں اور صحافیوں سمیت 30سے زائد بیگناہ فلسطینی شہید کیے جا چکے ہیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ غزہ میں اسرائیلی فوج کے ہاتھوں جوکچھ ہوا وہ انتہائی تشویش ناک ہے۔ ہم تمام متعلقہ فریقین سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ غزہ کی پٹی میں اسرائیلی فوج کے ہاتھوں نہتے فلسطینیوں کے قتل عام کی شفاف تحقیقات کرائیں۔

متعلقہ عنوان :