عوام آئندہ انتخابات کے بعد ایوان صدر، وزراء اعلیٰ ہائوس اور وزیراعظم ہائوس میں مذہبی لوگوں کو دیکھنا چاہتے ہیں، مولانا امجد لاہوری

بدھ اپریل 14:45

مانسہرہ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اپریل2018ء) جمعیت علماء اسلام کے ڈپٹی سیکر ٹری جنرل اور متحدہ مجلس عمل کے رابطہ سیکرٹری مولانا محمد امجد خان لاہوری نے کہاکہ عوام اگلے انتخابات کے بعد ایوان صدارت، وزرائے اعلیٰ ہائوس اور وزیراعظم ہائوس میں علماء اور مذہبی لوگوں کو دیکھنا چاہتے ہیں، متحدہ مجلس عمل آئندہ عام انتخابات میں بھر پور حصہ لے گی، ہم کتاب کے نشان پر الیکشن لڑیں گے اور پاکستان میں سب بڑی قوت بن کر مجلس عمل سامنے آئے گئی، انتخابی میدان کو ایم ایم اے کسی سطح پر بھی سیکولر لابی کیلئے خالی نہیں چھوڑے گی، ہمارا مقابلہ سیکولر لابی کے ساتھ ہو گا، متحدہ مجلس عمل دین اور وطن کے دشمنوں کا ہر محاذ پر مقابلہ کرے گی۔

وہ بدھ کو استاد القراء مولانا قاری فضل ربی کے پوتے مولانا قاری محمد ارشد مرحوم کے صاحبزادے قاری جلاالدین ارشد کے نکاح کی تقریب کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔

(جاری ہے)

اس موقع پر مولانا سید ہدایت الله شاہ، مولانا ناصر محمود، مولانا مفتی شمس الحق، وحید سواتی، مولانا حفیظ الرحمن، قاری حفیظ الله قریشی،مولانا عبدالقدیر، محمد اسجد، مولانا عبدالواحد، محمد حسن اجمل، اسعد منظور، محمد عمر عبید اور دیگر موجود تھے۔

مولانا محمد امجد خان نے کہا کہ مجلس عمل کا آئندہ عام انتخابات میں مقابلہ بہرحال بیرونی ایجنڈے پر کام کرنے اور پاکستان کو سیکولر قوت بنانے والوں کے ساتھ ہو گا جو بیرونی اشاروں پر نئے نعروں کی بنیاد پر گیم کھیلتے ہیں، پاکستان کی قوم مذہب سے بہت زیادہ پیار کرنے والی ہے اور اسلام کے نفاذ کیلئے پاکستان کی نوجوان نسل، خواتین اور عوام ترس رہے ہیں، انشاء الله یہ کام جلد مذہبی قوتیں کریں گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان نازک موڑ سے گذر رہا ہے، ان حالات میں جے یو آئی مجلس عمل کے پلیٹ فارم سے ملک میں اتحاد امت کیلئے اپنا کردار ادا کر رہی ہے، علماء دینی مدارس کے طلباء دین اور پا کستان کی حفاظت کیلئے ہر قربانی دینے کیلئے تیار ہے، اس واضح ثبوت گذشتہ روز کا واقعہ ہے کہ پاکستانی قوم اپنے ملک کے چپے چپے کی حفاظت کرنے کیلئے تیار ہے۔

مولانا محمد امجد خان نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ مجلس عمل متحد اور متفق ہے، اس اختلافات کی خبریں محض ایک پراپیگنڈا ہے، مجلس عمل کی مرکزی باڈی بن چکی ہے، باقی تین صوبوں میں بھی باڈیاں بن چکی ہیں، صوبہ خیبر کی باڈی کا بھی جلد اعلان کر دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کارکنوں سے کہا کہ وہ آئندہ عام انتخابات کیلئے بھرپور تیاریاں کریں، الیکشن نزدیک ہیں، جے یو آئی آئی مجلس عمل کے پلیٹ فارم سے بھرپور حصہ لے گی، لادین قوتوں کو شکست سے دوچار کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ کارکن عوام سے رابطے بڑھائیں اور ان کو جے یو آئی مجلس عمل کے منشور سے آگاہ کریں۔ انہوں نے ایک اور سوال کے جواب میں کہا کہ انتخابی ماحول کچھ غیر یقینی صورتحال کا شکار بھی ہے لیکن ہم انتخابات کیلئے تیاریوں میں مصروف ہیں، ہم متحدہ مجلس عمل کے پلیٹ فارم سے پوری قوت کے میدان میں اتریں گے۔