انسداد پولیو مہم، ڈپٹی کمشنر پشاور کی والدین سے بچوں کو پولیو سے حفاظتی ٹیکے لگانے کی اپیل

پشاور کو جلد پولیو سے پاک کر دیا جا ئے گا،ڈاکٹر عمران حامد شیخ

جمعرات اپریل 20:17

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 اپریل2018ء) ڈپٹی کمشنر پشاورڈاکٹر عمران حامد شیخ نے پشاور کے والدین سے اپیل کی ہے کہ وہ 23 اپریل سے شروع کی جا نے والی آٹھ روزہ مہم میں اپنے بچوں کو پولیو سے بچائو کے لیے حفاظتی ٹیکے ضرور لگوائیں۔ تاکہ پشاور سے پولیو سے موذی مرض کا خاتمہ کیا جا سکے۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے ڈسٹرکٹ کونسل ہال میں پشاور کے ڈاکٹروں / یوپیک انچارج سے خطاب کر تے ہوئے کیا۔

اس موقع پر ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر گل محمد ، یونیسیف اور ڈبلیو ایچ او کے نما ئندگان اور این سٹاف آفیسر ڈاکٹر انور جمال بھی موجود تھے۔ڈپٹی کمشنر پشاور نے کہا کہ پولیو کا خاتمہ ہم سب کا قومی فریضہ ہے اور ہم سب نے مل کر اس مرض کو جڑ سے ختم کر نا ہے۔ انھوں نے کہا کہ یوپیک چیئر مین یونین کو نسل کی سطح پر حکومتی نما ئندے ہیںاور اپنی یونین کونسل میں اپنی ذمہ داریوں کو احسن طریقے سے انجا م دیں اور پولیو کے خاتمے کے لیے اپنا کر دار ادا کریں ۔

(جاری ہے)

انھوں نے کہا کہ آٹھ روزہ آئی پی وی مہم 23 اپریل 2018 سے شروع ہو گی جس میں 4 ماہ سے 23 ماہ تک کے بچوں پولیو سے بچائو کے ٹیکے لگائے جا ئیں گے۔ جب کہ اس کے ساتھ ساتھ دو سال سے چھوٹے بچوں کو پولیو سے بچائو کے قطرے بھی پلا ئے جا ئیں گے اور اس مہم کے لیے 941 ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں جو روزانہ کی بنیاد پر مخصوص جگہوں پر بچوں کو پولیو سے حفاظتی ٹیکے لگائیں گی اور پولیو سے بچائو کے قطرے پلائیں گی۔ڈپٹی کمشنر پشاور نے اس موقع پر عوام سے اپیل کی کہ وہ اس مہم کے دوران اپنے بچوں کو پولیو سے حفاظتی ٹیکوں کے ساتھ ساتھ پولیو سے بچائو کے قطرے بھی پلائیں تا کہ ہم اپنے پیارے پاکستان کو اس موذی مرض سے جلد از جلد چھٹکارہ دلا سکیں۔