تہرے قتل کی واردات کے مجرم سزائے موت سے بال بال بچ گئے

سرگودھا جیل میں تہرے قتل کے 2 مجرموں کی پھانسی ایک بار پھر آخری لمحات میں روک دی ،ملزمان کی جانب سے صلح کی کوششوں کی درخواست پر پھانسی چند روز کے لیے موخر کر دی گئی

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس جمعہ اپریل 23:15

تہرے قتل کی واردات کے مجرم سزائے موت سے بال بال بچ گئے
سرگودھا(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔27 اپریل 2018ء) :تہرے قتل کی واردات کے مجرم سزائے موت سے بال بال بچ گئے ۔ سرگودھا جیل میں تہرے قتل کے 2 مجرموں کی پھانسی ایک بار پھر آخری لمحات میں روک دی گئی۔ملزمان کی جانب سے صلح کی کوششوں کی درخواست پر پھانسی چند روز کے لیے موخر کر دی گئی۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق سرگودھا جیل میں قید سزائے موت کے منتظر 2 قیدی امجد اور خضر حیات کو پھانسی دینے کے لیے گزشتہ روز 6 بج کر 30منٹ کا وقت مقرر کیا گیا تھا ۔

ملزمان کو پھانسی کے لیے لے جایا جانے لگا تھا کہ تہرے قتل کے مدعی فریق کی بہنیں اپنے ورثا سمیت ڈسٹرکٹ جیل سرگودھا پہنچ گئیں اور جیل حکام سے درخواست کی کہ صلح کے لیے کچھ وقت اور دے دیا جائے اور تب تک سزائے موت کو موخر کر دیا جائے۔اس پر علاقہ مجسٹریٹ نے بیانات قلمبند کرتے ہوئے پھانسی رکوا دی ۔یوں تہرے قتل کی واردات کے مجرم سزائے موت سے بال بال بچ گئے۔

متعلقہ عنوان :