جنوبی وزیرستان: چیف سیکرٹری محمد اعظم خان کی ہدایت

فاٹا کے قبائلی علاقوں سے تعلق رکھنے والے طلباء کا ڈومیسائل بنانے کا مشکل ترین کام آسان بنا دیا گیا ، پولیٹیکل کچہری کی بجائے میٹرک کے طلباء کو سکول میں ہی بنے گا

پیر اپریل 21:25

جنوبی وزیرستان (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 اپریل2018ء) صوبہ خیبر پختون خواہ کے چیف سیکرٹری محمد اعظم خان کی ہدایت پر فاٹا کے قبائلی علاقوں سے تعلق رکھنے والے طلباء کا ڈومیسائل بنانے کا مشکل ترین کام انتہائی آسان بنادیا گیا ۔چیف سیکرٹری کی ہدایت کے مطابق اب ڈومیسائل سرٹیفکیٹ بنانا پولیٹیکل کچہری کی بجائے میٹرک کے طلباء کو سکول میں ہی بنے گا ۔

چیف سیکرٹری کی ہدایت پر عمل در آمد کرتے ہوئے جنوبی وزیرستان کے پولیٹیکل ایجنٹ سہیل خان نے 187میٹرک کے طلباء کے لئے ڈومیسائل بناکر ان میں تقسیم کردئے گئے۔اب تک فاٹا کے قبائلی علاقوں سے تعلق رکھنے والے ہزاروں قبائلی طلباء چیف سیکرٹری کے پی کے کی پالیسی سے استفادہ حاصل کرچکے ہیں۔زرائع کے مطابق فاٹا کے قبائلی طلباء اور دیگر عوام کو پولیٹیکل کچہری میں ڈومسائل بنانا جوئے شیر لانے کے متراد ف تھا ۔

(جاری ہے)

جس کی وجہ سے قبائلی طلباء اور عوام کو نہ صرف پیسہ خرچ ہوتا تھا تو دوسری جانب کئی دنوں پولیٹیکل انتظامیہ کے کچہری کے طواف کرکے سخت محنت کے بعد ایک ڈومیسائل بنانے میں کامیاب ہوتے تھے۔ چیف سیکرٹری صوبہ خیبر پختون خواہ محمد اعظم خان نے چند ماہ قبل ایک حکم نامہ جاری کیا تھا کہ صوبہ خیبرپختون خواہ اور فاٹا کے قبائلی علاقوں سے تعلق رکھنے والے طلباء کو ڈومیسائل سرٹیفکیٹ سکول ہی میں بنے گا ۔

میٹرک کے طلباء کا ڈومیسائل سرٹیفکیٹ کا فارم سکول میں ریکارڈ کے مطابق پر کرکے محکمہ تعلیم ،قبائلی ملکان اور پولیٹیکل انتظامیہ کے اہلکار اور آفیسر ہی تصدیق کرنے کے بعد ڈومیسائل جاری کیا جائے گا ۔جس پر صوبہ خیبر پختون خواہ اور فاٹا کے قبائلی علاقوں میں سختی سے عمل در آمد شروع کیا گیا ۔پولیٹیکل ایجنٹ جنوبی وزیرستان کے کانفرنس روم میں ایک تقریب منعقد ہوئی ۔

جس میں جنوبی وزیرستان کے پولیٹیکل ایجنٹ سہیل خان ،اے پی او اخلاص احمد ،محکمہ ایجوکیشن جنوبی وزیرستان کے ایجنسی ایجوکیشن آفیسر محب اللہ خان داوڑ ،قبائلی ملک عرفان الدین برکی اور سکول کے طلباء نے شرکت کی۔تقریب میں جنوبی وزیرستان سے تعلق رکھنے والے میٹرک کا امتحان دینے والے 60طلباء میں ڈومیسائل سرٹیفکیٹ سرٹیفکیٹ تقسیم کئے گئے۔

اس موقع پر پولیٹیکل ایجنٹ سہیل خان نے بتایا کہ اب تک 187قبائلی طلباء کو چیف سیکرٹری کی پالیسی کے مطابق سکول ہی میں ڈومیسائل بنا کر دئے گئے ہیں۔جس کی وجہ سے قبائلی طلباء کا قیتمی وقت بھی ضائع ہونے سے بچ گیا اور وہ ٹرانسپورٹ اور دیگر اخراجات سے بھی بچ گئے ہیں۔میڈیا سے باتچیت کرتے ہوئے ملک عرفان الدین برکی نے کہا کہ چیف سیکرٹری صوبہ خیبرپختون خوہ محمد اعظم خان کی اس پالیسی کی بدولت اب تک صوبہ خیبرپختون خواہ اور فاٹا کے قبائلی علاقوں سے تعلق رکھنے والے ہزاروں طلباء کو سکول ہی میں دومیسائل سرٹیفکیٹ بناکر دئے گئے ہیں۔

ان کا کہناتھا کہ طلباء کو ڈومیسائل سرٹیفکیٹ بنانے میں سخت مشکلات کا سامنا تھا ایک طرف طلباء کے بھاری اخراجات اٹھ کر پولیٹیکل کچہری کے کئی دنوں تک مسلسل طواف کرنے کے بعد ہی بن جاتے تھے۔چیف سیکرٹری کے پی کے محمد اعظم خان کی اس پالیسی کی وجہ سے طلباء کا قیمتی وقت ضائع ہونے سے بچ گیا ہے۔