الیکشن کمیشن میں مجوزہ حلقہ بندیوں پر اعتراضات سننے کا کل آخری دن

اب تک مجوزہ حلقہ بندیوں پر 83اضلاع کی11سو ایک اعتراضات نمٹا دیئے گئے، ضلع ڈیرہ بگٹی، سبی اور ژوب سمیت 12اضلاع کے 37اعتراضات پر فیصلہ محفوظ کر لیا ، مزید 13اضلاع کی67اعتراضات سنے جائیں گے

منگل مئی 16:59

الیکشن کمیشن میں مجوزہ حلقہ بندیوں پر اعتراضات سننے کا کل آخری دن
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 مئی2018ء) الیکشن کمیشن میں مجوزہ حلقہ بندیوں پر اعتراضات سننے کا کل آخری دن ہے ، اب تک مجوزہ حلقہ بندیوں پر 83اضلاع کی11سو ایک اعتراضات نمٹا دیئے گئے جبکہ ضلع ڈیرہ بگٹی، سبی اور ژوب سمیت 12اضلاع کے 37اعتراضات پر فیصلہ محفوظ کر لیا گیا ، جبکہ مزید 13اضلاع کی67اعتراضات سنے جائیں گے۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن میں مجوزہ حلقہ بندیوں پر اعتراضات نمٹائے جانے کا سلسلہ جاری ہے ، اب تک 96اضلاع کے گیارہ سو41اعتراضات سنے جاچکے ہیں ،جن میں سے الیکشن کمیشن نے 83اضلاع کی11سو ایک اعتراضات نمٹا دیئے ہیں , جبکہ ضلع ڈیرہ بگٹی ، ہرنائی ، جعفر آباد ، کچھی، بارکھان ، شیرانی ، صحبت پور ، لورالائی ، سبی،ژوب ،زیارت،اور لہڑی کی حلقہ بندیوں پر 37اعتراضات پر فیصلہ محفوظ کیا جا چکا ہے ، جبکہ مزید 13اضلاع کی67اعتراضات سنے جائیں گے ، الیکشن کمیشن نے اسلام آباد ، کرک ، کو ہاٹ ، سوات ، صوابی ، نوشہرہ، بونیر، مٹیاری اور ٹھٹھہ کے تمام اعتراضات مسترد کر دیئے جبکہ کچھ اضلاع کی حلقہ بندیوں پر اعتراضات کو منظور بھی کیا گیا ہے، الیکشن کمیشن میں کل بدھ کو ضلع واشک ، پشین ، پنجگور ، قلعہ عبداللہ، خضدار ، خاران ، کیچ ، قلات ، چاغی اور آواران کی اپیلوں کی سماعت کی جائے گی ۔