درندہ صفت انسانوں نے بربریت کی انتہاء کر دی

16سالہ لڑکی کو زیادتی کے بعدزندہ جلادیا گیا، شبہ میں14افراد گرفتار ایسے واقعات کی روک تھام کے لئے آہنی ہاتھوں سے نپٹا جائے ، ملزمان کے لئے کڑی سزا تجویز کی جائے

ہفتہ مئی 21:01

درندہ صفت انسانوں نے بربریت کی انتہاء کر دی
جھاڑ کھنڈ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) بھارت میں 16سالہ لڑکی کو زیادتی کے بعدزندہ جلادیا، قتل کے شبہ میں 14افراد کو گرفتار کر لیا گیا،ایسے واقعات کی روک تھام کے لئے آہنی ہاتھوں سے نپٹا جائے ، ملزمان کے لئیکڑی سزا تجویز کی جائے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت میں سولہ سالہ لڑکی کے ساتھ اجتماعی جنسی زیادتی اور اسے قتل کرنے کے شبے میں چودہ افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

اس لڑکی کے ریپ کے بعد جب اس کے والد نے گاؤں کی کونسل میں شکایت کی تو ملزمان نے لڑکی کو زندہ جلا دیا ہے۔خبر رساں ادارے ڈی پی اے نے بھارتی حکام کے حوالے سے پانچ مئی بروز ہفتہ بتایا ہے کہ ریاست جھاڑکھنڈ میں جنسی زیادتی کے ایک کیس کی تحقیقات کے سلسلے میں چودہ مشتبہ افراد کو گرفتار کر لیا گیا۔

(جاری ہے)

میڈیا رپورٹوں کے مطابق اس مشرقی ریاست کے ضلع چترا میں یہ واقعہ جمعرات کی رات کو رونما ہوا۔

مقتولہ کے والد نے پولیس کو بتایا ہے کہ نشے کی حالت میں چار افراد نے ان کی بیٹی کو جمعرات کی رات اس وقت اغوا کیا، جب وہ ایک شادی کی تقریب میں شریک تھی۔ انہوں نے کہا کہ وہ ان کی بیٹی کو ایک گھر میں لے گئے، جہاں اسے تمام رات جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا اور جب انہوں نے گاؤں کی کونسل میں شکایت تو ملزمان نے غصے میں آکر انہیں مارا پیٹا اور ان کی بیٹی کو زندہ ہی جلا دیا۔۔بھارت میں حالیہ دنوں کے دوران جنسی زیادتی کے واقعات کی وجہ سے عوام میں غصہ نمایاں ہے۔ حکومت پر زور دیا جا رہا ہے کہ وہ اس طرح کے واقعات کی روک تھام کے لیے زیادہ مؤثر اقدامات اٹھائے۔ مقامی میڈیا کے مطابق جنسی زیادتی کے اس تازہ واقعے کے بعد لوگوں نے مطالبہ کیا ہے کہ ملزمان کو سخت سزا سنائی جائے۔

متعلقہ عنوان :