بھارتی فوجیوں نے ضلع شوپیاں میں 6نوجوان شہید کر دیئے‘شہداء کی تعداد 10ہو گئی

بھارتی فوجیوں نے ان نوجوانوں کو ضلع کے علاقے بادی گام میں محاصرے اور تلاشی کی کارروائی کے دوران شہید کیا نوجوانوں کی شہادت پر علاقے میں زبردست مظاہروں کا سلسلہ شروع ہو گیا‘فوجیوں کی مظاہرین پر فائرنگ‘متعدد زخمی

اتوار مئی 18:40

سرینگر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 مئی2018ء) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران اتوار کے روز ضلع شوپیاں میں 6 کشمیری نوجوان شہید کر دیے۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق فوجیوں نے پانچ نوجوانوں کو ضلع کے علاقے بادی گام میں محاصرے اور تلاشی کی کارروائی کے دوران شہید کیا۔۔شہید ہونے والوں کے نام پروفیسر محمد رفیع بٹ ، صدام احمد پڈر ، بلال احمد مہند،عادل ملک اور توصیف احمد شیخ بتائے جا رہے ہیں ۔

(جاری ہے)

قابض فوجیو ں کی طرف سے بادی گام میں ہی پر امن مظاہرین پر اندھا دھند فائرنگ کے نتیجے میںزخمی ہونے والا اکیس سالہ نوجوان آصف احمد میر سرینگر کے ایک ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔ قبل ازیں اسی علاقے میں ایک جھڑپ کے دوران بھارتی فورسز کے دو اہلکار زخمی ہو گئے تھے۔ ان چھ نوجوانوں کی شہادت سے ہفتے کے روز سے مقبوضہ وادی میں شہید ہونے والے نوجوانوں کی تعداد بڑھ کر10ہو گئی۔ بھارتی فوجیوں نے 3 نوجوانوں کو ہفتے کے روز سرینگر کے علاقے چھتہ بل میں محاصرے اور تلاشی کی ایک پرتشدد کارروائی کے دوران شہید کیاتھاجبکہ ایک اور نوجوان کو بھارتی فوج کی ایک گاڑی نے صفا کدل میں کچل کر شہید کردیاتھا۔