پی ٹی ایم کیساتھ مذاکرات کیلئے قائم 22 رکنی جرگے کا اجلاس

منظور پشتین نے جرگے کیساتھ کوئی رابطہ نہیں کیا،آئندہ کا لائحہ عمل طے کرنے کیلئے جرگے کا دوبارہ اجلاس10مئی کوہوگا، بریفنگ

پیر مئی 22:18

پشاور۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) ٍپشتون تحفظ موومنٹ (پی ٹی ایم )کے ساتھ مذاکرات کیلئے ایپکس کمیٹی کے اجلاس کے تناظرمیں قائم 22رکنی جرگے کا پشاورمیں ایک اجلاس منعقد ہوا، جرگے میں فاٹا کی ایجنسیوں سے تعلق رکھنے والے ایم این ایز،قبائلی مشران اور ملکان سمیت خیبرپختونخوا حکومت سے وزیراطلاعات شاہ فرمان نمائندگی کررہے ہیں۔ جرگہ کمیٹی کے اراکین نے میڈیاکواجلاس کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہاکہ پشتون تحفظ موومنٹ کے لیڈر منظور پشتین نے ابھی تک جرگے کیساتھ کوئی رابطہ نہیں کیا ہے، اس لئے جرگے کا 10مئی کو دوبارہ اجلاس بلایا گیاہے جس میں آگے کا لائحہ عمل پیش کیا جا ئے گا۔

انہوں نے کہاکہ منظورپشتین کے ساتھ رابطے کیلئے جرگے نے چار ارکان پر مشتمل کمیٹی بنا دی ہے ،منظور پشتین کو ہم ضمانت بھی دیں گے جب وہ ہمارے ساتھ بیٹھنے پر رضامند ہو جائیں گے امید ہے انکے ساتھ تمام مسائل حل ہوجائیں گے ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہاکہ پشتون تحفظ مومنٹ کی طرف سے جرگے کومستردکرنیوالی بات غلط ہے اس حوالے سے منظورپشتین کے ساتھ غلط فہمیاں پیداکی گئی ہیں ۔ جرگے میں خیبرایجنسی سے شاہ جی گل،،جنوبی وزیرستان سے ملک علاوالدین،ایف آر پشاورسے ملک فدا محمد ایف آرشامل ہیں،،جرگہ اجلاس میں وزیرداخلہ احسن اقبال پرقاتلانہ حملے کی مذمت ا ور ان کی جلد صحت یابی کیلئے دعاکی گئی