سی پیک؛خیبرپختونخوا میں رشکئی اقتصادی زون پر کام تیزی سے جاری

منصوبہ کیلئے 1000 ایکڑ اراضی حاصل کی جاچکی،علاقے میں صنعتی بستی کے قیام کی تجویز سے متعلق وفاقی حکومت نے کوئی مداخلت نہیں کی،وزارت منصوبہ بندی

بدھ مئی 18:11

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 مئی2018ء) چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبہ((سی پیک))کے تحت خیبرپختونخوا کے ضلع نوشہرہ میں واقع رشکئی اقتصادی زون پر کام تیزی سے جار ی ہے۔بد ھ کو وزارت منصوبہ بندی کے قائم سی پیک سیکرٹریٹ حکام نے آن لائن کو بتایا کہ رشکئی اقتصادی زون (ایم ون نوشہرہ ) کیلئے 1000 ایکڑ اراضی حاصل کی جاچکی ہے اورصنعتی بستی کے قیام کیلئے اقدامات کا سلسلہ تیزی سے جاری ہے۔

اس اقتصادی زون میں پھلوں اوراشیائے خوراک کی پیکجنگ،ٹیکسٹائل سٹچنگ و نیٹنگ اوردیگر متعلقہ صنعتوں کے قیام اوران کیلئے سہولیات پر توجہ دی جائیگی۔رشکئی اقتصادی زون کی علاقائی و جغراقیائی اہمیت پر روشنی ڈالتے ہوئے انہوں نے کہاکہ اس صنعتی بستی سے ائیرپورٹ کا فاصلہ 65کلومیٹر،ڈرائی پورٹ 65 کلومیٹر،،ریلوے سٹیشن 25کلومیٹر،سٹی سینٹر15 کلومیٹر،ہائی وے 5کلومیٹر اورموٹروے بالکل متصل ہے۔

(جاری ہے)

ان کا کہنا تھا کہ اس علاقے میں صنعتی بستی کے قیام کی تجویز صوبائی حکومت کی طرف سے آئی تھی اور اس میں وفاقی حکومت کی جانب سے کوئی مداخلت نہیں کی گئی ہے۔حکام کے مطابق سی پیک کے دوسرے مرحلے کے تحت پاکستان میں چینکے تعاون سے صعنتی انقلاب برپا ہوگا‘اس مرحلہ میں ملک کے چاروں صوبوں‘گلگت بلتستان‘فاٹا اور آزاد کشمیر میں مجموعی طورپر 9 صنعتی زونز بنائیں جائیں گے۔