اسلام آباد سمیت پنجاب اور خیبرپختونخوا میں 6.4 شدت کا زلزلے کے جھٹکے

لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا ، گھبرا کر کلمہ طیبہ کا ورد کرتے ہوئے گھروں اور دفاترسے باہر نکل آئے،زلزلے کی گہرائی 94 کلومیٹر ریکارڈ کی گئی

بدھ مئی 22:33

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 مئی2018ء) وفاقی دارالحکومت اسلام آباد سمیت خیبر پختونخوا اور پنجاب کے مختلف شہروں میں ایک بار پھر 6.4 شدت زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے لوگ گھبرا کر کلمہ طیبہ کا ورد کرتے ہوئے گھروں سے باہر نکل آئے۔ بدھ کو اسلام آباد، پشاور،، لاہور،، فیصل آباد، چترال میں دوپہر کے اوقات میں ایک بار پھر زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے جس سے لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا۔

ڈیرہ اسماعیل، لوئر دیر، اورکزئی ایجنسی، باجوڑ ایجنسی، مانسہرہ، چارسدہ، ہنگو، شانگلہ، مالاکنڈ، چنیوٹ سمیت دیگر علاقوں میں شدید زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے۔اس کے علاوہ مظفر آباد سمیت آزاد کشمیر کے تمام علاقوں میں زلزلے کے شدید جھٹکے محسوس کیے گئے ہیں۔زلزلے کے جھٹکے 7 سے 8 سیکنڈ تک محسوس کیے گئے جس کے نتیجے میں ابتدائی طور پر زلزلے کے نتیجے میں کسی قسم کے جانی و مالی نقصان کی اطلاع نہیں ملی ہے۔

(جاری ہے)

اس سے قبل صبح اسلام آباد میں 8 بجکر 35 منٹ پر زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے، جن کا دورانیہ 20 سے 30 سیکنڈز تھا۔۔خیبرپختونخوا کے شہروں صوابی، پاراچنار، سوات،، ایبٹ آباد،، مردان، مانسہرہ، ڈیرہ اسماعیل خان اور بنوں میں بھی زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے۔صوبائی ڈیزاسٹر مینیجمنٹ اتھارٹی(پی ڈی ایم ای)کے مطابق ابھی تک خیبرپختونخوا میں زلزلے سے کسی نقصان کی رپورٹ نہیں ملی۔

زلزلہ پیما مرکز کے مطابق زلزلے کی شدت ریکٹر اسکیل پر 5.5 ریکارڈ کی گئی، جس کی زیر زمین گہرائی 12 کلومیٹر تھی، جبکہ اس کا مرکز بنوں سے 30 کلومیٹر شمال تھا۔دوسری جانب پنجاب کے شہروں میانوالی، سرگودھا اور بھکر میں بھی زلزلیکے جھٹکوں کی رپورٹس سامنے آئیں۔زلزلے کے جھٹکوں کے باعث لوگ گھبرا کر کلمہ طیبہ کا ورد کرتے ہوئے گھروں سے باہر نکل آئے۔