ڈاکٹر صفدر علی عباسی کا نیب اسلام آباد کی طرف سے جاری پریس ریلیز پر تحفظات کا اظہار

جمعہ مئی 17:42

راولپنڈی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 مئی2018ء) پاکستان پیپلز پارٹی ورکرز کے صدرڈاکٹرصفدر علی عباسی نے نیب اسلام آباد کی طرف سے جاری پریس ریلیز پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس میں لگائے گئے الزامات جھوت اور بدنیتی پر مبنی ہیں ۔ایک بیان میں انہوں نے سرکاری زمینوں پرہاؤسنگ،کالونیان بنانے اور ناجائز اثاثہ جات بنانے کا الزام جو ناہید خان، منور علی عباسی، معظم علی عباسی لگائے جانے والے الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ہماراا خاندان پاکستان کی سیاست میں ایک مقام رکھتا ہے اور ایک بے بنیاد شکایت کی جانچ پرتال قرار دے کر اور اسے مشتہر کرکے ہماری خاندانی ساکھ کو متاثرکرنے کی کوشش کی گئی جس کی ہم شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔

(جاری ہے)

ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ اسی تناظر میں ایک ہی دن میں جاری پریس ریلیز جس میں نواز شریف کی منی لاندرنگ کے حوالے سے ہے اس پر تو وضاحت نہیں دی جا رہی اورہمارے حوالے سے جاری پریس ریلیز پر خاموشی ہے انہوں نے کہا کہ ہما را خاندان محترمہ بینظیربھٹو کی دوسری حکومت کے خاتمے کے بعد 22سال سے احتساب کے مختلف مراحل سے گزر چکا ہے اور ہر دفعہ نیب کو اپنے الزامات واپس لینے پڑے ہیں یا ہم عدالتوں سے با عزت بری ہوئے ہیں اسی زمین میں انہی الزامات کی بنیاد پر میرے بھتیجے معظم علی عباسی پر ایک اینٹی کرپشن کی انکوائری کرانے کی کوشش کی گئی جس پر سندھ ہائیکورٹ نے اینٹی کرپشن ڈیپارٹمنٹ کو نوٹس دیا ہوا ہے اور چھ ماہ سے اس کا کوئی جواب نہیں دیا جارہا ہی- انہوں نے کہا کہ جب اینٹی کرپشن ڈیپارٹمنٹ مینں چیزیں آگے نہ برھ سکیں توہمارے سیاسی مخالفین نے انہی الزامات کی بنا پر ایک بے بنیاد شکایت نیب کو بھیجی جس میں میرے پورے خاندان پر لغو اور جھوٹے الزامات لگاے گئے ہیں ہم اپنے خلاف ہر وسم کی انکوائری اور تحقیقات کا سامنا کر نے کو تیار ہیں لیکن نیب کی طرف سے کسی بھی ایسی بلاجواز کاروائی کو مسترد کرتے ہیں جس سے کردار کشی کا پہلو سامنے آتا ہو۔