سپریم کورٹ نے کمیشن کو مختلف کمپنیوں کے دود ھ کی جانچ جاری رکھنے کا حکم دے دیا

ْجن کمپنیوں کے دودھ کی رپورٹ مثبت آئے ، ان پر پابندی ختم کر دی جائے ،چیف جسٹس ثاقب نثار

ہفتہ مئی 17:32

سپریم کورٹ نے کمیشن کو مختلف کمپنیوں کے دود ھ کی جانچ جاری رکھنے کا ..
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 مئی2018ء) سپریم کورٹ نے ذبوں کے غیر معیاری دودھ کے فروخت کے معاملے پر کمیشن کو مختلف کمپنیوں کے دود ھ کی جانچ جاری رکھنے کا حکم دے دیا ۔ عدالت نے اسکم مل کے ڈبوں پر ’’ دودھ نہیں ہے ‘‘ درج کرنے کی بھی ہدایت کر دی ۔ سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں ڈبوں کے غیر معیاری دودھ فروخت کرنے سے متعلق کیس سماعت ہوئی ۔

دوران سماعت عدالت نے کمیشن کو مختلف کمپنیوں کے دودھ کی جانچ جاری رکھنے کا حکم دیا ۔

(جاری ہے)

اس موقع پر چیف جسٹس جسٹس ثاقب نثار کا ریمارکس میں کہنا تھا کہ جن کمپنیوں کے دودھ کی رپورٹ مثبت آئے ، ان پر پابندی ختم کر دی جائے کیونکہ یہ ہمارے بچوں کی زندگیوں کا معاملہ ہے ۔ اس پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہو گا ۔ چیف جسٹس نے اسکم مل کے سربرارہ سے مکالمہ کرتے ہوئے کہنا تھا کہ آپ نے سفارش کرانے کی کوشش کی ۔ میرے لیے صرف اللہ کی سفارش ہے ۔ یہ بھول جائیں کہ میں کسی کی سفارش مانوں گا ۔ میں اس دودھ کو نہیں مانتا ۔ عدالت نے اسکم مل کے ڈبوں پر ’’ دودھ نہیں ہے ‘‘ درج کرنے کا حکم دیتے ہوئے اسکم مل کی دوبارہ جانچ کرانے کی بھی ہدایت کی ۔