بھارت،پنچایت انتخابات پر تشدد ہنگاموں کی بھینٹ،13افراد ہلاک،5صحافی زخمی

منگل مئی 23:39

نئی دہلی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 مئی2018ء) بھارتی ریاست مغربی بنگال میں پنچایت انتخابات پر تشدد ہنگاموں کی بھینٹ چڑھ گئے، ہنگاموں میں 13افراد ہلاک اور 5صحافی زخمی ہو گئے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق طویل قانونی جدوجہد کے بعد آج پنچایت انتخابات شروع ہوئے جو پٴْرتشدد ہنگاموں کی نذر ہوگئے۔مرکزی وزارت داخلہ نے مغربی بنگال حکومت سے واقعہ کی رپورٹ طلب کی ہے۔

73فیصدووٹ ڈالے گئے،اتنی زبردست ووٹنگ کے باوجودپنچایتی انتخابات تشدد کی بھینٹ چڑھ گئے۔ ریاست کے 7اضلاع میں پرتشدد ہنگاموں میں 13افراد ہلاک جبکہ علی پور میں 5صحافی زخمی ہوگئے۔

(جاری ہے)

شمالی 24پرگنہ ، جنوبی 24پرگنہ ، مدنا پور، ندیا، مرشدا?باد اور دیناج پور میں بھی تشدد کے واقعات ہوئے۔ہنگامہ برپا کرنیوالوں نے زیادہ تر انتخابی مراکز کو ہدف بنایا ، ترنمول کانگریس اور اپوزیشن جماعتوں کے کارکنوں کے مابین خونریز جھڑپیں ہوئیں،متعد د پولنگ بوتھس کے قریب دستی بم پھینکے گئے جس سے درجنوں افراد زخمی ہوگئے۔

سیکیورٹی کی کثیرتعداد علاقے میں تعینات کردی گئی۔ پولیس نے ہنگامہ برپاکرنیوالوں کی گرفتاری کی کارروائی شروع کردی۔ووٹوں کی گنتی 17مئی کو ہوگی۔2019ء کے پارلیمانی انتخابات کے پیش نظر پنچایت انتخابات انتہائی اہمیت کے حامل ہیں۔