کراچی میں سورج آگ برسانے لگا، درجہ حرارت 42 ڈگری سینٹی گریڈ سے تجاوز کرگیا

سمندری ہوائیں تیسرے روز بھی بند ہونے کے باعث شہریوں کو گرم ہواؤں اور چلچلاتی دھوپ کا سامنا ہے

منگل مئی 23:39

کراچی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 مئی2018ء) کراچی میں سورج آگ برسانے لگا ، درجہ حرارت 42 ڈگری سینٹی گریڈ سے تجاوز کرگیا۔محکمہ موسمیات نے کراچی میں ہیٹ ویو جاری کردیا ہے ۔شہر کا درجہ حرارت منگل کو بھی 44 ڈگری سینٹی گریڈکو چھوگیا۔ سمندری ہوائیں تیسرے روز بھی بند ہونے کے باعث شہریوں کو گرم ہواؤں اور چلچلاتی دھوپ کا سامنا ہے۔ تاہم شمال کی جانب سے ہلکی رفتار سے گرم ہوائیں چلیں۔

دوپہر2 بجے کراچی کا درجہ حرارت 42 ڈگری سینٹی گریڈ سے تجاوز کرگیا جب کہ گرمی کی شدت(ہیٹ انڈیکس)44 درجہ محسوس کیا گیا ۔ ہیٹ ویو کا سلسلہ جمعرات تک برقرار رہے گا۔دوسری جانب شہر میں جاری شدید گرمی کے باعث سندھ مدرسہ یونیورسٹی میں ہونے والے امتحانات موخر کردیئے گئے ہیں۔ ایس ایم آئی یو میں 22 سے 24 مئی تک ہونے والے امتحانات کی تاریخ کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

(جاری ہے)

رجسٹرار سندھ مدرسہ یونیورسٹی کے مطابق 25 مئی سے شیڈول بقیہ امتحانات مقررہ وقت پر منعقد ہوں گے۔واضح رہے کراچی میں گزشتہ تین روز سے شدید گرمی کی لہر جاری ہے، جب کہ گرمی،، ہوا کی بندش اور کے الیکٹرک کی جانب سے کی جانے والی غیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ نے عوام کا جینا عذاب کیاہوا ہے۔ ایدھی فانڈیشن کے سربراہ فیصل ایدھی کے مطابق کراچی میں حالیہ گرمی کے سبب چند روز کے دوران 60 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔

اندرون سندھ میں بھی گرمی کی شدت برقرار ہے محکمہ موسمیات کے مطابق لاڑکانہ، موئن جو دڑومیں 42، دادو، سکھر میں 43، مٹھی میں 44 اور چھور میں 45 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈکیاگیا۔محکمہ موسمیات نے شہریوں کو مشورہ دیا ہے کہ وہ بلا ضرورت گھروں سے باہر نہ نکلیں، گھر سے باہر جانے کے دوران سر پر گیلا کپڑا رکھیں اور پانی کا زیادہ سے زیادہ استعمال کریں۔طبی ماہرین نے عوام الناس کو خبردارکیا ہے کہ وہ گرمی کی شدت کے دوران تمام احتیاطی تدابیر سے کام لیں تاکہ ہیٹ اسٹروک سے محفوظ رہ سکیں۔