حکمرانوں کی غلطیاں پی آئی اے کوبھگتنا پڑرہی ہیں ،ایاز میمن موتی والا

پیر مئی 19:41

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) کراچی تاجرا لاائنس ایسوسی ایشن کے چیئرمین ایاز میمن موتی والا نے کہاہے کہ پی آئی اے سمیت ملکی اداروں کو تباہ کرنے والے ملک دشمن اورغدار ہیں ۔افسوس کے ماضی میں حکمرانوں کی جانب سے کی گئی غلطیاںآج پی آئی اے برداشت کررہاہے،پی آئی اے جو کبھی ایک منافع بخش ادارہ ہوا کرتا تھا اسے نااہل حکمرانوں نے تباہ وبرباد کرکے رکھ دیا ہے۔

پی آئی اے میں ایسے لوگوں کو بھرتی کیاگیاجن کی ڈگریاں جعلی تھی اس سے نہ صرف میرٹ کاخون ہوا بلکہ اس نے قومی ادارے کی ساکھ کو تاریخ ساز نقصان سے دوچار کیاہے ،جو لوگ اس وقت پی آئی اے پر بوجھ بنے ہوئے ہیں وہ سب کے سب حکمرانوں کے سفارشی یا قریبی رشتے دار ہیں ،ان خیالات کااظہارانہوںنے ڈیفنس آفس میں تاجر الائنس کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

(جاری ہے)

اس موقع پر سینئروائس چیئرمین حمیدالدین جنرل سیکرٹری، معراج احمدخان، خورشید عالم ،سہل افضل لیگل ایڈوائزر،عامرضیاء اور دیگر بھی موجود تھے ۔انہوںنے کہاکہ 2017میں پی آئی اے میں 43ارب65کروڑ کے خسارے کے ذمہ دار بھی یہ ہی لوگ ہیں جو ہر گزرتے ہوئے سال میں اس قوم کو اربوں روپے کا چونا لگا کر فرار ہوجاتے ہیں انہوںنے کہاکہ اداروں کی بحالی کی سب سے بڑی زمہ داری حکمرانوں پرعائد ہوتی ہے ،اگرپی آئی اے کی بربادی کے ذمہ داروں کا تعین نہ کیا گیا تو یہ لوگ ملک کے تمام ادارو ں کا بیڑہ غرق کرکے ہی دم لینگے۔

انہوںنے کہاکہ معیشت کی تباہ حالی کی بڑی وجہ یہ ہے کہ حکومت نے ملکی وسائل سے فائدہ اٹھانے کی بجائے غیرملکی قرضوں پرانحصار کیا اور اس کے ساتھ ساتھ قومی اداروں کو بھی برائے فروخت پر لگادیاہے ،ان کا کہنا تھا کہ پی آئی اے میں پچاس فیصد ملازمین نہ صرف اضافی ہیں بلکہ اس میں موجود بڑے بڑے افسران ایسے بھی ہیں جن کی ڈگریاں جعلی ثابت ہوئی ہیں، اس پر اگر انتظامیہ ایسے لوگوں کو نکالتی بھی ہے تو یہ لوگ عدالتوں سے جاکر حکم امتناعی لیکر آجاتے ہیں،انہوں نے کہاکہ پی آئی اے کا اصل مسئلہ صرف اضافی یا سفارشی افسران نہیں بلکہ موجودہ اور گزشتہ حکومت کی نااہلیاں بھی اس میں شامل ہیں ۔

متعلقہ عنوان :