نوشہرہ، اسلام آباد ہائی کورٹ کے ملازم کو نامعلوم افراد نے قتل کردیا

منگل مئی 19:00

نوشہرہ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 مئی2018ء) نوشہرہ چارسدہ روڈ پر کمانڈری کیمپ کے قریب جی ٹی روڈ پر اسلام آباد ہائی کورٹ کے ملازم کو نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے بے دردی سے قتل کردیا۔ بدقسمت اسلام آباد ہائی کورٹ میںملازم تھا اور سحری کے بعد موٹر سائیکل پر ڈیوٹی کے لیے جارہا تھا۔ دوسرے واقعے میں مانکی شریف میں جائیدا د کے تنازعہ پر بھائی نے اپنے سالوں کے ساتھ مل کر اپنے سگھے بھائی کوفائرنگ کرکے شدید زخمی کردیا۔

تین ملزمان اتکارب جرم کے بعد فرار ہوگئے۔ نوشہرہ کلاں پولیس نے مقدمات درج کرکے تفتیش شروع کردی ۔گل زمان ولد میر عالم ساکن ترلاندی چارسدہ نے پولیس کو رپورٹ درج کراتے ہوئے کہا کہ وہ گھر میں موجود تھا کہ اس کو اطلاع ملی کہ اس کا بیٹا آیاز ولد گل زمان جو کہ اسلام آباد ہائی کورٹ میں کلاس فور ملازم ہے اپنی موٹر سائیکل نمبرC2736 پر چارسدہ سے اسلام آباد سحری کے بعد اپنی ڈیوٹی پر جارہا تھا کہ خویشگی مہاجر کیمپ کمانڈر ی کے قریب جی روڈ پرنامعلوم ملزمان نے فائرنگ کرکے اس کے بیٹے کو قتل کردیا۔

(جاری ہے)

ان کی کسی سے کوئی دشمنی نہیںمعلوم ہونے پردعویداری کریں گے۔ مقتول کے ساتھ اپنا موبائل او ر رقم بھی موجود تھی۔ دوسرا واقعے مانکی شریف محلہ بدرشی خیل میں پیش آیا جہاں پر عدنان خٹک ولد سیفور خان نے پولیس کورپورٹ درج کراتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے گھر میںموجود تھا کہ اسکا بھائی ضیا ء اللہ اپنے سالوں سید اعظم نور اعظم پسران نامعلوم ساکنان معراجی حال مانکی شریف ائے اورمیرے ساتھ لڑائی جھگڑا شروع کردیا۔ اورمجھ پرفائرنگ کرکے میرے بھائی نے مجھے زخمی کردیا وجہ عناد گھر کا تنازعہ ہے۔دو نوں واقعات میں ملزمان ارتکاب جرم کے بعد فرار ہوگئے پولیس نے الگ الگ مقدمات درج کرکے تفتیش شروع کردی۔