اسرائیلی فوج نے فلسطین کے انسانی حقوق سینٹر کے سربراہ کو دن دیہاڑے اغوا کر لیا

جمعہ جون 11:10

غزہ۔یکم جون (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 جون2018ء) اسرائیلی فوج نے مقبوضہ غرب اردن کے جنوبی علاقے سے سرگرم فلسطینی اسامہ شاہین کو اغوا کر لیا۔مرکز مطالعہ فلسطینی اسیران کے مطابق35 سالہ اسامہ شاہین کو الخلیل شہر کے جنوبی علاقے درا میں ان کے گھر پر چھاپہ مار کارروائی میں اغوا کیا گیا۔ سینٹر کے سربراہ اور معروف صحافی کے گھر پر اسرائیلی فوج نے چھاپہ مارا اور اسامہ شاہین کو اغوا کر کے ساتھ لے گئے۔

واضح رہے کہ اسامہ شاہین نو ماہ قبل اسرائیلی جیل سے رہا ہوئے تھے۔

(جاری ہے)

اسامہ شاہین ایک سال تک کسی ایف آئی آر کے اسرائیل کی انتظامی نظر بندی میں رہے۔مرکز مطالعہ فلسطینی اسیران نے اپنے سربراہ کی بلا جواز گرفتاری کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ کارروائی اسامہ شاہین کو فلسطینی اسیران کے حق میں سرگرمی دکھانے پر کی گئی ہے۔مرکز اسیران نے انسانی حقوق کے اداروں سے اپیل کی ہے کہ وہ اسامہ شاہین سمیت دیگر فلسطینی رضاکاروں اور صحافیوں کی اسرائیلی حراست سے فوری رہائی کے لئے ضروری اقدام کریں جنہیں اسرائیل نے یکطرفہ کارروائی کرتے ہوئے پابند سلاسل کر رکھا ہے۔

متعلقہ عنوان :