نگران وزیر اعلیٰ کا نام پیش کرنے کے معاملے پر پی ٹی آئی مشکلا ت کا شکار

میاں محمود الرشید نے اسپیکر سے ملاقات می ںپروفیسر حسن عسکری کے علاوہ اوریا مقبول جان ،یعقوب طاہر اظہار کے نام پیش کئے فواد چوہدری نے سوشل میڈیا پر اوریا مقبول جان کی بجائے ایاز میر کے نام کیساتھ نئی فہرست جاری کر دی،محمود الرشید کا بھی نیا بیان سامنے آ گیا جب تک ایاز امیر کا نام مجھ تک پہنچا تب تک اسپیکر سے ملاقات اور میڈیا سے گفتگو کر چکا تھا ،ہماری طرف سے چار نام ہیں‘ ویڈیو بیان دونوں جماعتیںنئے پیش کئے جانیوالے ناموں پر مشاورت کریں گی ،کل شہباز شریف سے ملاقات میں حتمی نام پر اتفاق متوقع ہے ‘ محمود الرشید محمو د الرشید نے اسپیکر سے ملاقات سے قبل عمران خان کو دوبارہ ٹیلیفونک رابطہ کر کے نئے پیش کئے جانیوالے ناموں بارے حتمی طو رپر پوچھا تھا‘ ذرائع

جمعہ جون 19:25

نگران وزیر اعلیٰ کا نام پیش کرنے کے معاملے پر پی ٹی آئی مشکلا ت کا شکار
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 جون2018ء) نگران وزیر اعلیٰ پنجاب کا نام پیش کرنے کے معاملے پر تحریک انصاف شدید مشکلات کا شکار ہے ، میاں محمود الرشید کی جانب سے اسپیکر رانا محمد اقبالسے ملاقات میں حسن عسکری کے علاوہ اوریا مقبول جان اور یعقوب طاہر اظہار کے نام پیش کئے گئے جبکہ مرکزی ترجمان فواد چوہدری نے سوشل میڈیا پر نئے ناموں کی فہرست جاری کر دی ،،تحریک انصاف نے ایاز اے میر کا نام شامل کر کے اسپیکر کو چار ناموں سے آگاہ کر دیا ،مسلم لیگ (ن) نے مزید دو، دو نام پیش کر دئیے ،دونوں جماعتیںنئے پیش کئے جانیوالے ناموں پر مشاورت کریں گی جس کے بعد کل ( اتوار) کے روز شہباز شریف اور محمود الرشید کے درمیان ملاقات میں حتمی نام کا اعلان متوقع ہے ۔

تحریک انصاف کے رہنما میاں محمود الرشید نے اسپیکر پنجاب اسمبلی رانا محمد اقبال سے ان کے چیمبر میں ملاقات کی ۔

(جاری ہے)

رانا ثنا اللہ خان سابق وزیر اعظم نواز شریف کے فیصل آباد میں جلسے کی وجہ سے ملاقات میں شامل نہ ہو سکے ۔ ملاقات میں مسلم لیگ (ن) او رپی ٹی آئی کی جانب سے مزید ، دو ، دو نام تجویز کئے گئے ہیں ۔ میاں محمود الرشید نے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ دو نام مسلم لیگ (ن) اور دونام ہماری طرف سے تجویز کئے گئے اور اتوار کے روز وزیر اعلیٰ شہباز شریف سے ملاقات کا وقت طے ہوگا اور کسی ایک نام پر حتمی فیصلہ کرلیا جائے گا۔

انہوںنے کہا کہ ہماری طرف سے پہلے پروفیسر حسن عسکری کا نام موجود ہے جبکہ اوریا مقبول جان اور یعقوب طاہر اظہار کے نام دئیے گئے ہیں ۔ اسپیکر نے کہا ہے کہ ہم نے جو نام دئیے ہیں ان میں ایک نام پر اتفاق رائے ہو سکتا ہے جبکہ ان کی طرف سے جو نام دیا گیا ہے ان میں سے بھی ایک نام ہمارے لئے قابل قبول ہو سکتا ہے لیکن اس کیلئے دونوں جماعتوں کی قیادت مشاورت کرے گی اور کل اتوار کو فائنل رائونڈ ہوگا۔

انہوںنے ایک سوال کے جواب میں کہاکہ پی ٹی آئی میں تینوںناموںپر مشاورت ہوئی ہے اور اس کے بعد دوبارہ نام پیش کئے گئے ہیں ۔ جو باتیں سامنے آرہی ہیں وہ حقائق کے برعکس ہیں میںنے اپنی ذاتی حیثیت میں کوئی نام نہیں دیا بلکہ قیادت کی مشاورت سے نام پیش کئے تھے ۔ ہر جماعت میں پسند اور نا پسند ہوتی ہے لیکن جن لوگوں نے اس بات کا بتنگڑ بنایا میرا ان سے کوئی گلہ نہیں ۔

انہوںنے کہا کہ (ن) لیگ نے جو نام پیش کئے ہیں اس کے بارے میں وہ خود ہی بتا سکتی ہے۔انہوںنے کہا کہ پی ٹی آئی کا واضح موقف ہے کہ انتخابات وقت مقررہ پر ہونے چاہئیں ۔ اگر ایک دفعہ آئینی حدود سے باہر اقدام ہوا تو اس کی کوئی حد نہیں ہو گی اور پھر معلوم نہیں انتخابات کب ہوں گے۔ ذرائع کے مطابق میاںمحمو د الرشید نے اسپیکر رانا محمد اقبال سے ملاقات سے قبل پارٹی قائد عمران خان کو دوبارہ ٹیلیفونک رابطہ کر کے نئے پیش کئے جانیوالے ناموں بارے حتمی طو رپر پوچھا تھا۔

اسپیکررانا محمد اقبال اور میاںمحمود الرشید کی ملاقات کے اختتام پر پی ٹی ائی کے مرکزی ترجمان فواد چوہدری نے سوشل میڈیا پر اپنی فہرست جاری کر دی جس میں اوریا مقبول جان کی بجائے ایاز امیر کا نامشامل تھا۔ اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ محمودالرشید اسپیکر پنجاب اسمبلی کے پاس بیٹھے ہوئے تھے اور رابطے میں کمی کوتاہی یا کنفیوژن ہو سکتی ہے۔

عمران خان کی جانب سے تشکیل دی گئی کمیٹی نے جن ناموں کی منظوری دی ہے وہ وہی نام ہیںجو میںنے جاری کئے ہیں ۔بعد ازاں محمود الرشید اپنے ویڈیو بیان کے ذریعے بتایا کہ اسپیکر رانا محمد اقبال سے ملاقات میں انہیں اوریا مقبول جان اور یعقوب طاہر اظہار کا نام پیش کیا تھا لیکن بعد ازاں مجھے پارٹی کی جانب سے ایاز اے میر کے نام سے بھی آگاہ کیا گیا تاہم اس وقت تک میری اسپیکر سے میٹنگ مکمل ہوچکی تھی اور میں میڈیا سے بھی گفتگو کر چکا تھا تاہم اب میںنے اسپیکر پنجاب اسمبلی کو دوبارہ اس نام سے آگاہ کر دیا ہے اور ہماری طرف سے حسن عسکری کے علاوہ اوریا مقبول جان ، ایاز اے میر اور یعقوب طاہر اظہار کے نام بھجوائے گئے ہیں ۔