متحدہ امارات کے ولی عہد کی روسی صدر سے ملاقات

ہفتہ جون 11:10

ماسکو ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 جون2018ء) متحدہ عرب امارات اور روس نے دہشت گردی کے خلاف وسیع تر عالمی اتحاد کی تشکیل کا متفقہ مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ملک مشرق وسطیٰ کو وسیع پیمانے پر تباہی پھیلانے والے ہتھیاروں سے پاک خطہ دیکھنا چاہتے ہیں۔العربیہ ٹی وی کے مطابق متحدہ امارات کے ولی عہد الشیخ محمد بن زاید آل نھیان نے اپنے دورہ روس کے دوران ماسکو میں روسی صدر ولادی میر پیوٹن سے تفصیلی ملاقات کی۔

اس موقع پر دونوں ملکوں کے درمیان کئی معاہدوں اور باہمی تعاون کی یادداشتوں پر دستخط کیے گئے۔

(جاری ہے)

صدر پیوٹن اور اماراتی ولی عہد کی ملاقات میں دوطرفہ تزویراتی شراکت کا اعلان کیا گیا۔ملاقات کے بعد میڈیا کو جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ روس اور امارات دہشت گردی کے پھیلتے ناسور کے خاتمے کے لیے مل کر کوششیں جاری رکھیں گے۔ انتہا پسندی اور دہشت گردی کے خاتمے کے لیے دہشت گردوں کے بنیادی ڈھانچے کو ختم کرنا اور دہشت گردی کے معاون ممالک کو روکنا ہو گا۔بیان میں عالمی برادری پر زور دیا گیا کہ وہ دہشت گردی کے حوالے سے دہرا معیار ترک کرتے ہوے عالمی قوانین اور اقوام متحدہ کے بین الاقوامی معاہدوں کی روشنی میں دہشت گردی کے خلاف عالمی اتحاد تشکیل دے۔