پشاور،ضلعی انتظامیہ کی گرانفروشوں کیخلاف کاروائیا ں تیز ، 121 قانون شکن گرفتار

بدھ جون 20:20

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 جون2018ء) پشاورضلعی انتظامیہ نے رمضان المبارک میںگرانفروشوں کے خلاف کاروائیا ں تیز کر دی ہیںاور پشاور کے مختلف علاقوں سے مزید 121گرانفروشوں کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ اس حوالے سے ڈپٹی کمشنر پشاور ڈاکٹر عمران حامد شیخ کی ہدایت پر ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر شاہد علی خان نے ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر اصلاح الدین اور ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر ہمایون خان کے ہمراہ گلبہار، جی ٹی روڈ،، نشترآباد، ہشتنگری اور سکندر پورہ میں مختلف دکانوں کی چیکنگ کر تے ہوئے گرانفروشی اور دوکانوں سے باہر سامان رکھنے پر 43 افراد کو گرفتار کیا۔

ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر عرفان علی اور ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر نجید اللہ نے متھرا ، پجگی روڈ، چمکنی اور پجگی روڈ پر کاروائی کر تے ہوئے گرانفروشی پر 33 افراد کو گرفتار کیا۔

(جاری ہے)

ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر سعید اللہ جان اور ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنرنعمت اللہ خان کنڈی نے بڈھ بیر، کوہاٹ روڈ، متنی اور اڑمر کے علاقے میں کاروائی کر تے ہوئے گرانفروشی پر 28 افراد کو گرفتار کیا۔

ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر نعمت اللہ کنڈی نے تہکال ، یونیورسٹی روڈ اور ٹائون کے علاقوں میں 17 گرانفروشوں کو گرفتار کیا۔ واضح رہے کہ ڈپٹی کمشنر پشاور کی ہدایت پر ضلعی انتظامیہ کے افسران افطار ی کے اوقات میںبھی بازاروں میں موجود رہتے ہیں اور اکثران کی افطاری بازاروں میں ہی رمضان سہولت مراکز پر ہوتی ہیں۔ افسران کی افطاری کے اوقات میں بازاروں میں موجود ہونے کی وجہ سے عوام کو اشیاء خوردنوش سرکاری نرخ نامے کے مطابق فروخت کی جا رہی ہیں۔

آج عوام نے رمضان سہولت مراکز میں بھی گرانفروشوں کے خلاف شکایات درج کیں جن پر موقع پر کاروائی کی گئی۔ آج ضلعی انتظامیہ کی ہیلپ لائن 1052 پر درجنوں شکایات پر متعلقہ علاقہ مجسٹریٹس نے کاروائیاں کیں۔ ڈپٹی کمشنرپشاور ڈاکٹر عمران حامد شیخ نے ایڈیشنل اسسٹنٹ کو گرانفروشوں کے خلاف سخت کاروائی کی ہدایت کی ہے۔جبکہ انھوں نے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ خریداری کے وقت دکانداروں کو سرکاری نرخ نامہ کے مطابق ادائیگی کریں اور خلاف ورزی کی صورت میں ضلعی انتظامیہ کی ہیلپ لائن 1052 یا قریبی رمضان سہولت مرکز پر شکایت درج کریں۔ آپ کی شکایت پر کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔