نگران وزیر برائے منصوبہ بندی و ترقیات عبد الروف خٹک کی زیر صدارت اجلاس

اجلاس میں پاک چین اقتصادی راہداری کے تحت زیر تعمیر اور زیر غور مختلف ترقیاتی منصوبوں کے بارے میں تفصیلی غور کیا گیا

جمعرات جون 20:50

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 جون2018ء) خیبر پختونخوا کے نگران وزیر برائے منصوبہ بندی و ترقیات عبد الروف خٹک کی زیر صدارت ایک اجلاس منعقد ہوا جس میں پاک چین اقتصادی راہداری کے تحت زیر تعمیر اور زیر غور مختلف ترقیاتی منصوبوں کے بارے میں تفصیلی بحث کی گئی ۔ اس کے علاوہ موقع پر مختلف منصوبوں کی عوامی افادیت اور اہمیت پر گفت و شنید بھی ہوئی جبکہ جاری منصوبوں پر کام کی نوعیت انکی مالی حیثیت اور انکے معیار سمیت علاقائی ترقی میں کردار پر تفصیلی تبادلہ خیا ل ہوا۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ جوائنٹ کو آرڈینیشن کمیٹی کی منظور کردہ منصوبوں پر کام جاری ہے جن میں حویلیاں تا کوٹ ایکسپریس وے جسکی مجوزہ اخراجات کا تخمینہ 130 بلین روپے ہے، سکھی کناری ہائیڈ رو پاور پراجیکٹ (تخمینہ لاگت 180 بلین روپی)اور ہکلا ڈی آئی خان موٹر وے (تخمینہ لاگت 129 بلین روپی) شامل ہیںجبکہ مذکورہ کمیٹی نے اپنے چھٹے اجلاس میں خیبر پختونخوا کیلئے مزید 03 منصوبوں کے اصولی منظوری دی ہے جس میں چترال شندور لنک روڈ، رشکئی سپیشل اکنامک زون اور سر کلر ریل پراجیکٹ شامل ہیں ۔

(جاری ہے)

اجلاس میں ان منصوبوں پر جاری اقدامات کا جائزہ لیا گیا جبکہ نگران وزیر منصوبہ بندی و ترقیات نے تمام ترقیاتی منصوبوں پر عمل در آمد کو بروقت یقینی بنانے کیلئے اقدامات کی ہدایت کی اور اس سلسلے میں چھوٹے بڑے تمام اقدامات کو ریکارڈ کا حصہ بنانے کی ہدایت کی ۔

متعلقہ عنوان :