کلثوم نواز کی طبیعت اب قدرے بہتر ہے ،ْا

ب بھی مکمل طور پر خطرے سے باہر نہیں ،ْنوازشریف کاش چودہ جون سے پہلے اہلیہ کے پاس آجاتا تو بہتر ہوتا ،ْ کم از کم اس وقت حوش میں تھیں ،ْ سابق وزیر اعظم

جمعہ جون 13:23

کلثوم نواز کی طبیعت اب قدرے بہتر ہے ،ْا
لندن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 جون2018ء) سابق وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ ان کی اہلیہ کلثوم نواز کی طبیعت اب قدرے بہتر ہے تاہم وہ اب بھی مکمل طور پر خطرے سے باہر نہیں ہیں۔برطانوی نشریاتی ادارے سے بات چیت کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ کلثوم نواز پہلے کے مقابلے میں بہتر ہیں۔انہوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کاش میں جمعرات (14 جون) سے پہلے ان کے پاس آجاتا تو بہتر ہوتا، کم از کم وہ اٴْس وقت اپنے ہوش و حواس میں تو تھیں۔

دوسری جانب نوازشریف کے صاحبزادے حسین نواز نے بھی بی بی سی کو بتایا کہ بیگم کلثوم نواز کی حالت اور کیفیت گذشتہ جمعرات کے مقابلے میں قدرے بہتر ہے۔واضح رہے کہ کینسر کے عارضے میں مبتلا بیگم کلثوم نواز گزشتہ کئی ماہ سے علاج کی غرض سے لندن میں موجود ہیں جہاں ان کی کئی کیمو تھراپیز ہو چکی ہیں۔

(جاری ہے)

کلثوم نواز کی طبیعت خراب ہونے کے بعد رواں ماہ 14 جون کو انہیں ایک بار پھر ہسپتال لایا گیا، جہاں سے انہیں انتہائی نگہداشت کے وارڈ (آئی سی یو) شفٹ کیا گیا، آئی سی یو میں کلثوم نواز دل کی تکلیف کے باعث گر پڑیں، جس کے بعد انہیں مصنوعی تنفس (وینٹی لیٹر) پر منتقل کردیا گیا تھا اور وہ اب تک ہوش میں نہیں آئی ہیں۔

سابق وزیراعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز بھی اٴْسی روز لندن پہنچے تھے اور ہیتھرو ایئرپورٹ پر انہیں بیگم کلثوم کی طبیعت سے متعلق آگاہ کیا گیا تھا، جس کے بعد وہ ایئرپورٹ سے ہی کلثوم نواز کی عیادت کیلئے ہسپتال پہنچے۔دو روز قبل میڈیا سے گفتگو میں نواز شریف نے کہا تھا کی جب وہ ایئرپورٹ پہنچے تو حسن نواز نے کہا کہ آپ سیدھے اسپتال آجائیں، کلثوم نواز کی حالت تشویش ناک ہے۔سابق وزیراعظم نے کہا کہ ہسپتال پہنچنے کے بعد سے اب تک انہوں نے بیگم کلثوم کو ہوش میں نہیں دیکھا، ساتھ ہی انہوں نے قوم سے دعاؤں کی بھی اپیل کی تھی۔