نگران حکومت کی طرف سے عمران نیازی کو دیا جانے والا غیرمعمولی پروٹوکول سوالیہ نشان ہے ،وزیر داخلہ پی ٹی آئی کے کارکن کی حیثیت سے کام کررہے ہیں

پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنرل سید نیر حسین بخاری کا بیان

جمعہ جون 21:29

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 جون2018ء) پاکستان پیپلز پارٹی کے سیکرٹری جنرل سید نیر حسین بخاری نے کہا ہے کہ نگران حکومت کی طرف سے عمران نیازی کو دیا جانے والا غیرمعمولی پروٹوکول سوالیہ نشان ہے۔ وزیر داخلہ پی ٹی آئی کے کارکن کی حیثیت سے کام کررہے ہیں۔

(جاری ہے)

میڈیا رپورٹ پر جن میں کہا گیا ہے کہ عمران نیازی کی سکیورٹی کے لئے پولیس کے ساتھ 300 رینجرز اہلکاروں کو تعینات کیا گیا ہے پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے سید نیر بخاری نے کہا کہ جن سیاستدانوں کو دہشتگردوں سے خطرہ ہے ان کے لئے کوئی سکیورٹی کا ہتمام نہیں کیا جاتا۔

انہوں نے کہا کہ عمران نیازی کو غیرمعمولی پروٹوکول قبل از وقت انتخابات دھاندلی ہے۔ نیر بخاری نے کہا کہ نگران حکومت جانبداری کا تاثر دینے سے گریز کرے کیونکہ نگران حکومت کے پاس اس بات کا کوئی جواز نہیں ہے کہ ایک شخص کو غیرمعمولی پروٹوکول دیا جائے اور باقیوں کی سکیورٹی کونظرانداز کیا جائے۔