شاد باغ میں 15سالہ نوجوان کو مبینہ طور پر گلہ دبا کر قتل کر دیا گیا

باغبانپورہ کے علاقے سے نوجوان کو قتل کر کے لاش صندوق میں رکھ دی گئی پولیس نے موقع سے ضروری شواہد اکٹھے کرنے کے بعد لاشوں کو کو مردہ خانے منتقل کر دیا

ہفتہ جون 17:33

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 جون2018ء) شاد باغ کے علاقے میں 15سالہ نوجوان کو مبینہ طور پر گلہ دبا کر قتل کر دیا گیا جبکہ باغبانپورہ کے علاقے میں نوجوان کو قتل کرنے کے بعد لاش کو صندوق میں رکھ دیا گیا ، پولیس نے موقع سے ضروری شواہد اکٹھے کرنے کے بعد لاشوںکو مردہ خانے منتقل کر دیا ۔ بتایا گیا ہے کہ 15سالہ توقیر شاد باغ کے علاقے میں قائم چمڑے کی فیکٹری میں ملازم تھا اور ڈیوٹی ختم ہونے کے بعد فیکٹری میں ہی سو جاتا تھا۔

(جاری ہے)

صبح کے وقت فیکٹری کے دیگر ملازمین نے لاش دیکھ کر پولیس کو اطلاع دی جس نے موقع پر پہنچ کر ضروری شواہد اکٹھے کرنے کے بعد لاش کو مردہ خانے منتقل کر دیا ۔ پولیس کے مطابق بظاہر نوجوان کو گلہ دبا کر قتل کیا گیا تاہم اصل وجوہات پوسٹمارٹم رپورٹ کے بعد سامنے آسکیں گی۔باغبانپورہ کے علاقے میں ایک گھر سے صندوق سے لاش برآمد ہوئی ہے ۔ ارسلان نامی نوجوان کو تیز دھار آلے سے گلہ کاٹ کر قتل کیا گیا اورہاتھ پائوں باندھ کر لاش کو صندوق میں رکھ دیا گیا ۔ اطلاع ملنے پر پولیس نے موقع پر پہنچ کر ضروری شواہد اکٹھے کرنے کے بعد لاش کو ہسپتال منتقل کر کے تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے ۔

متعلقہ عنوان :